اسلام آباد ؛ 21اپریل 2017؛

35

 

قومی اسمبلی کا اجلاس قائمقام سپیکر مرتضٰی جاوید عباسی کی صدار ت میں شروع ہوتے ہی اپوزیشن کی طرف سے ایوان میں نعرے بازی
، قائمقام سپیکر نے
ہاؤس کو ان آرڈر کرنے کی باربار درخواست کے باوجود اپوزیشن نے شور شرابہ بند نہیں   کیا  اور بار بار درخواست کی کہ ہاوس کو قواعد کے مطابق چلانے کے لیے رولز کو معطل کرنے کی قراداد پیش کرنا ضروری تھا،،
مرتضی جاوید عباسی نے فلور
وزیر پارلیمانی امور شیخ آفتاب کے حواکے کرتے ہوےء  ہوے  قرداد پیش کرنے کی درخواست کی اجازت دی جس کے باوجود اپوزیشن اراکین نے اپنا رویہ تبدیل نہیں کیا اور مسلسل نعرے بازی کرتے رہے ،،
،قائمقام سپیکر قومی اراکین کے لئے
اپوزیشن کی طرف سے نعرے بازی اور شور شرابے کی وجہ سے ایوان کی کاروائی کو جاری رکھنا مشکل ہو گیا تھا،

ایوان میں شور شرابے اور نعرے بازی کے باعث قائمقام سپیکر نے اجلاس غیر معینہ مدت کے لیے ملتوی کر دیا،،
اے پی پی /سحر