وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کی قومی اسمبلی میں بجٹ تقریر

8

اسلام آباد، 27 اپریل، (اے پی پی ): وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا کہ پارلیمنٹ کا حق ہے کہ بجٹ پر بحث کرے اگلی حکومت کا اختیار ہے کہ بجٹ میں تبدیلی کرنے میں ایک تباہ حالمعیشت ملی لیکن حکومت نے معاشی بہتری کی طرف توجہ دی۔
جمعہ کو قومی اسمبلی میں وفاقی بجٹ برائے سال ۹۱ ۔ ۸۱۰۲ پیش کرتے ہوئے وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا کہ تب لوگوں کامورال کم تھا اس حکومت نے مشکل فیصلے کیے،فی کس آمدنی میں اضافہ ہوا تمام بڑی فصلوں کی پیداوار میں بہتری آئی،کاشتکاروں کی مالی امداد فراہم کی گئی ،خدمات کے شعبے میں 6.4 فیصد ترقی ہوئی،افراط زر میں کمی کی۔انہوں نے کہا کہ ہم نے حکومتی وسائل امانت سمجھ کر عوام کی بہتری کے لیے استعمال کیے، تاریخ کی کم ترین شرح سود کی وجہ سے سرمایہ کاری میں بہتری آئی،نجی شعبے کے قرضوں میں اضافہ ہوا برآمدات میں اضافہ ہوا،بیرونی سرمایہ کاری میں اضافہ ہوا ہے ۔ وزیر خزانہ سال میں درست فیصلوں کی بدولت بہتری آئی۔
فارن ایکسچینج ریزرو ز میں اضافہ ہوا نرواں سال مالی خسارہ 5.5 فیصد تک محدود رہے گا ، وزیر خزانہ نے کہا کہ پانچ سال میں معیشت نے 8 ، 5 فیصد ترقی کی ۔ایف بی آر ٹیکس آمدنی کا ہدف 4435 ارب روپے مقرر کیا گیا ہے حکومت سماجی تحفظ خاص طور پر بی آئی ایس پی میں سرمایہ کاری جاری رکھے گی سال میں درست فیصلوں کی بدولت بہتری آئی، فارن ایکسچینج ریزرو ز میں اضافہ ہوا ،رواں سال مالی خسارہ 5.5 فیصد تک محدود رہے گا ، وزیر خزانہ ں سال معیشت نے 8 ، 5 فیصد ترقی کی ، وزیر خزانہ ایف بی آر ٹیکس آمدنی کا ہدف 4435 ارب روپے مقرر کیا گیا ہے۔
مفتاح اسماعیل نے کہا کہ حکومت سماجی تحفظ خاص طور پر بی آئی ایس پی میں سرمایہ کاری جاری رکھے گی،نان فائلرکمپنی پرودہولڈنگ ٹیکس کی شرح 7 فیصدسےبڑھا کر8فیصد کرنیکی تجویز،: حکومت پانچ ارب روپے سے فنڈ سپورٹ ایگریکلچر قائم کر رہی ہے۔
وزیر خزانہ نے کہا کہ ہرقسم کی کھادوں پرسیلز ٹیکس کی شرح 3 فیصد تک کم کرنےکی تجویز ہے،ایف بی آر نے آیندہ مالی سال کیلیے4 ہزار435 ارب روپے وصولی کاہدف حاصل کرنا ہے،حکومت فلم انڈسٹری کے لیے ایک مالی پیکج کا اعلان کر رہی ہے۔
انہوں نے کہا کہ حکومت پانچ ارب روپے سے زرعی فنڈ قائم کررہی ہے، ایف بی آرکا ٹیکس ہدف 4 ہزار435 ارب روپے مقررکردیا گیا، صوبے پراپرٹی ٹیکس کو ایک فیصدتک لے ا ٓئیں، نان فائلر40لاکھ سےزائد مالیت کی جائیداد نہیں خرید سکے گا۔
وزیراعظم کی یوتھ اسکیم بھی جاری ہے، برسوں کے دوران ٹیکس وصولیوں میں ریکارڈ اضافہ ہوا۔
سعیدہ/وسیم/ فاروق ا ن م