محرم الحرام کے دوران سیکورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں 56 امام بارگاہوں اور17 تکیہ خانوں کے حفاظتی انتظامات کے لیے 3 ہزارپولیس اہلکار تعینات کیے گئے دوہزار سے زائد فرنیٹئرکورکے اہلکارسیکورٹی کے فرائض انجام دیں گے ،شیعہ،سنی ،علماءکے تعاون سے سیکورٹی انتظامات کو حتمی شکل دے دیا ،ڈی آئی جی کوئٹہ عبدالرزاق چیمہ کی پریس کانفرنس سے خطاب

21

کوئٹہ۔ 14ستمبر (اے پی پی ):ڈی آئی جی کوئٹہ عبدالرزاق چیمہ نے کہاہے کہ محرم الحرام کے دوران سیکورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں 56 امام بارگاہوں اور17 تکیہ خانوں کے حفاظتی انتظامات کے لیے 3 ہزارپولیس اہلکار تعینات کیے گئے دوہزار سے زائد فرنیٹئرکورکے اہلکارسیکورٹی کے فرائض انجام دیں گے ۔شیعہ،سنی ،علماءکے تعاون سے سیکورٹی انتظامات کو حتمی شکل دے دیا ہے یکم محرم سے کوئٹہ میں موٹرسائیکل ڈبل سواری پرپابندی عائد کر دی ہے تاہم صحافی اورسیکورٹی اہلکار اس حکم سے مستثنیٰ ہونگے اسی طرح دسویں محروم کوموبائل فون سروس کوبند رکھنے کے لیے حکام کو لکھ دیاگیاہے دسویں محرم کیلئے تین ہزار پولیس اہلکاراور دوہزار سے زائد ایف سی اہلکاروں کو تعینات کردیا گیا ہے ، شیعہ کانفرنس کے صدر آغاداﺅد نے کہا کہ پولیس اور ایف سی کی طرح ہمارے دوہزار رضاکار سیکورٹی فورسز کے ساتھ حفاظتی انتظامات پر مامور ہوں گے ہماری بھر پور کوشش ہے کہ ملک دشمن عناصر کے عزائم کو ناکام بنائیں پاکستان میں شیعہ سنی کا کوئی تنازعہ نہیں اور تمام فرقوں کو مذہبی آزادی حاصل ہے ۔ محرم کا مہینہ ہمیں بھائی چارے اور امن کا درس دیتا ہے ہمیں اب ثابت کرنا ہوگا کہ بدامنی پھیلانے والوں کے عزائم ناکام بنائیں گے ۔ (محمد بلال اعوان وی این ایس کوئٹہ )