سرمایہ کاری کے بعد ٹاپی گیس پائپ لائن کو پاکستان پہنچنے میں دو سال لگیں گے: چئیر مین ٹاپی

23

اسلام آباد، 06دسمبر  (اے پی پی): ترکمانستان ، افغانستان، پاکستان ، ایران (ٹاپی) گیس پائپ لائن منصوبے کے چئیر مین  معا معتمرات  امانوف نے کہا ہے کہ سرمایہ کاری کے بعد ٹاپی گیس پائپ لائن کو پاکستان تک آنے میں دو سال کا عرصہ درکار ہوگا۔ وہ یہاں جمعرات کوانسٹیٹوٹ آف سٹریٹیجک سٹڈیز اسلام آباد کے زیر اہتمام سیمینار سے خطاب کر رہے تھے۔

چئیر مین ٹاپی کا کہنا تھا کہ افغانستان کی سیکیورٹی صورتحال سے آگاہ ہیں،ہم جانتے ہیں کہ مشکلات کا سامنا کرنا ہو گا مگر کام کی تکمیل  ممکن ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ اسلامک ڈولیپمنٹ بینک سے ترکمانستان کے حصے پر سرمایہ کاری کے لیے بات ہوئی ہےاور مزید بین الاقوامی اداروں سے سرمایہ کاری کے لیے بات کرنے پر تیار ہیں۔

چئیر مین ٹاپی نے مزید کہا کہ گیس کی قیمت کے حوالے سے ابھی کچھ کہنا قبل از وقت ہو گا شراکت داروں سے رابطے میں ہیں، اس منصوبے سے پاکستان کے عوام اور حکومت کو فائدہ حاصل ہو گا اور معیشت ترقی کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی دنیا کو اس منصوبے سے کوئی اختلاف نہیں اور ان کا اس منصوبے میں شامل ہونا ناگزیر ہے۔

 

اے پی پی / سہیل/شاہ زیب