پاکستان کی پہلی سالانہ دور وزہ نیشنل سائنٹیفک کانگریس کا انعقاد 15، 16 دسمبر کو ہو گا

109

اسلام آباد،دسمبر 10(اے پی پی) پاکستان کی پہلی سالانہ دور وزہ نیشنل سائنٹیفک کانگریس (این ایس سی) اس ماہ کی 15 اور 16 تاریخ کو پاک چائینہ فرینڈشپ سینٹراسلا م آباد میں منعقد ہوگی۔اس کانگریس کا انعقاد شفا تعمیر ملت یونیورسٹی اور شفا انٹر نیشنل ہسپتال نے ایسوسی ایشن آف فزیشنز آف پاکستانی ڈیسنٹ آف نارتھ امریکہ (APPNA-USA) اور ایسوسی ایشن آف پاکستانی فزیشنز اینڈ سرجنز ا ٓف یوکے (APPS-UK) کے اشتراک سے کیا ہے جبکہ ہائیر ایجوکیشن کمیشن اور فوجی فاؤنڈیشن ہسپتال سمیت دیگر معروف قومی ادارے بھی اس کانگریس کے انعقاد میں شامل ہیں۔  کانگریس کے باقاعدہ آغاز سے دو روز قبل ہی شفا تعمیر ملت یونیورسٹی اور شفا انٹرنیشنل ہسپتال کے مختلف مقامات پر 13 اور14 دسمبر کو ورکشاپس، ماسٹر کلاسز اور گروپ ڈسکشنز کا انعقاد کیا جائے گا۔اس سلسلے میں آج  نیشنل پریس کلب اسلام آباد میں ہونے والی پریس بریفنگ میں اظہار خیال کرتے ہوئے نیشنل سائنٹیفک کانگریس کے چئیر مین پروفیسر محمد اقبال نے کہا کہ ” نیشنل سائنٹفک کانگریس پاکستان میں ایک منفرد سائنسی فورم ثابت ہوگی”۔ انہوں نے ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے اپیل کی کہ وہ وہ اس تعلیمی ایونٹ کے مثبت پہلوؤں کو اجاگر کریں تاکہ صحت اور تعلیم کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے ماہرین اور ان شعبوں سے وابستہ دیگر افراد کی شرکت یقینی بنائی جاسکے جس سے پاکستان میں اچھی صحت کے حوالے سے مثبت رائے عامہ ہموار ہوگی۔ مقررین میں دوروزہ کانگریس کے سیکرٹری پروفیسر ڈاکٹر توصیف احمد راجپوت، کنوینئر ڈاکٹر سعیداللہ شاہ اور سائنٹیفک سیشن کے سیکرٹری ڈاکٹر ہادی خان شامل تھے۔ نیشنل سائنٹیفک کانگریس کا بنیادی مقصد طبی شعبے کی تحقیق اور طریقوں میں تنوع، جدیدرجحانات اور شعبوں کے انضمام اور تحقیق کے نتائج کے ساتھ ہمارے صحت کے قومی مسائل  کا حل ہے۔ کانگریس کے سیشنز کا انعقاد اس انداز میں ہو گا کہ اس میں ماہرین جدید ٹیکنالوجی جس میں روبوٹکس، سائبر نائف، پیلیٹو کئیر اور ڈیجیٹل ہیلتھ وغیر ہ سے متعلق جدید رجحانات کا جائزہ  لیں گے۔ جبکہ ساتھ ہی ساتھ پاکستان میں مختلف شعبوں میں مریض اور صحت کو مدنظر رکھتے ہوئے صحت کے شعبے کو بہتر بنانے پر غور کیا جائے گا۔ اگرچہ اس کانگریس میں بہت سے بین الاقومی مقررین شرکت کررہے ہیں جو اس کی حیثیت عالمی بناتے ہیں تاہم توجہ کا مرکز صرف پاکستان کے صحت کے مسائل رکھنے کے لیے اسے منتظمین نے قومی کانگریس کا نام دیا ہے۔ کانگریس کے شرکاء کو موقع ملے گا کہ وہ ایک دوسرے سے اپنے تجربات شئیر کرسکیں، تحقیق کے نتائج پر بات کرسکیں اور قومی و بین الاقومی مقررین کے سامنے اپنی آراء رکھ سکیں جس سے مشترکہ تحقیق کے مواقع میسر آئیں گے۔

اے پی پی/سعدیہ کمال/حامد بلال

وی این ا یس اسلام آباد