آئی ایم ایف کے ساتھ کوئی خفیہ معاہدے نہیں کئے: وزیر خزانہ اسد عمر

0
49

پشاور، 11فروری (اے پی پی): وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف کے ساتھ کوئی خفیہ معاہدے نہیں کئے، ملکی معیشت سدھارنے سے متعلق معاملات زیر غور ہیں, آئی ایم ایف اپنا مفاد دیکھ کر قرضہ دیتا ہے۔

سرحد چیمبرآف کامرس سے خطاب میں وفاقی وزیر خزانہ نے کہا کہ کسی نے آ کر ملک ٹھیک نہیں کرنا، ہم نے خود اقدامات کرنے ہونگے, اس سلسلے میں آئی ایم ایف کے ساتھ بات چیت جاری ہے۔دبئی میں وزیر اعظم نے اپنے خطاب میں ویژن کلیئر کردیا ہے جبکہ ایران اور افغانستان کے ساتھ تجارتی تعلقات میں بہتری لانے کی ضرورت ہے۔

اسد عمر نے کہا کہ بجلی کی قیمتوں میں اضافہ 70 فیصد عوام پر نہیں کیا گی،بجلی کے غیر قانونی کنکشنز کے خاتمے کی ضرورت ہے اس سلسلےمیں بھرپور مہم جاری  ہے۔ٹیکسز کی  ریکوری سے 5 جدیدیت کی طرف جائینگے اور فروری کے آخر میں اس ضمن سے متعلق رپورٹ آجائیگی۔

وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے کہا کہ سیاحت کی مد میں ملائیشیا کی سالانہ آمدنی 22 ارب اور ترکی کی 44 ارب روپے ہے, ترکی کے ساتھ تجارت بڑھانے کیلئے الگ فورم بنا رہے ہیں۔

ہمسایہ ممالک کی صورتحال پر بحث کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ افغانستان میں قیام امن کیلئے پاکستان نے ہرممکن کردار ادا کیا یے جبکہ بھارت میں آدھا الیکشن پاکستان کیخلاف اقدامات پر گزرتا ہے۔

اے پی پی /صائمہ حیات /حامد

وی این ایس  پشاور