شاہراہوں کے اطراف درخت لگانے کے لئے وزارت موسمیاتی تبدیلی اور مواصلات کے درمیان معاہدہ

31

اسلام آباد، فروری 12(اے پی پی): اپنی شاہراہ پروگرام کیلئے وزارت مواصلات اور وزارت موسمیاتی تبدیلی کے مابین ایم او یو کی تقریب انعقاد ہوا۔ تقریب میں وفاقی وزیر مراد سعید اور وزیر مملکت زرتاج گل کی شرکت، اس موقع وزیر مملکت برائے موسمیات زرتاج گل کا خطاب ان کا کہنا تھا کہ موسمیاتی تبدیلی پر دیر پا پالیسی تھی نہ ہی اس پر کام ہوا 10 ارب درخت لگانے جا رہے ہیں جس کیلئے 100 ارب درکار ہوں گے لیکن خزانہ خالی ہے

موٹرویز اور ہائی ویز کے اطراف میں گرین بیلٹس خالی پڑیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ این جی اوز اور دیگر مخیر افراد سے اپیل کرتی ہوں کہ وہ یہاں پر پودے لگائیں موٹرویز اور ہائی ویز پر ان  ڈونرز کو سائن بورڈز پر اپنے ادارے کے  لیبل لگانے کی سہولت فراہم کریں گے۔ وزیر مملکت کا مزید کہنا تھا لاہور میں جامن کے درخت کاٹے گئے  جس سے سالانہ  12 کروڑ کا منافع ملتا تھا،وزارت مواصلات کے پائلٹ منصوبے پر وزارت مواصلات نے بہت تعاون کیا،پاکستان کو موسمیاتی تبدیلی میں خطرات ہیں، 10 ارب درخت لگانے کے منصوبے پر وزیر اعظم نے اہم اقدامات اٹھائے۔

اس موقع پر وزیر مواصلات مراد سعید کا کہنا تھا مسلم لیگ ن کی حکومت نے خزانے خالی کر دیئے ہیں،ہمارے پاس درخت لگانے کے لیے پیسے ہی نہیں ہیں،12 ہزار 131 کلومیٹر کی موٹروے ہے،60 سے 200 فٹ کی گرین بیلٹس خالی پڑی ہیں،این جی اوز دیگر ادارے اپنی شاہراہ کے منصوبے پر ہماری مدد کریں، ان کو مزید کہنا تھا کہ تین سال کے بعد ان این جی اوز اور اداروں کو موٹروے پر سپانسرشپ دی جائے گی۔

 مراد سعید  کا کہنا تھا کہ پاکستان میں جنگلات کی بے دردی سے کٹائی کی گئی،قوم سے وعدہ تھا کہ جو زمہ داری ملی اسے قبول کرینگے،پاکستان کی موٹروے اور شاہراہوں کو سرسبز بنائینگے۔

اے پی پی/وسیم/شاہ زیب

وی این ایس اسلام آباد