ولی عہدمحمدبن سلمان کی پاکستان آمد، اتحاد امت کے لئے اہم سنگ میل ہوگا: علامہ ڈاکٹر نورالحق قادری

0
100

 

اسلام آباد 11 فروری (اے پی پی): وفاقی وزیربرائے مذہبی امور و بین المذاہب ہم آہنگی علامہ ڈاکٹر نورالحق قادری نے کہا ہے کہ سعوی عرب کے ولی عہدشہزاد محمد بن سلمان کا دورہ پاکستان نہ صرف دونوں ممالک کے تعلقات میں مزید بہتری کے لئے اہم ہے بلکہ اس سے اسلامی اتحاد کی طرف بھی اہم پیش رفت ہوگی۔
پیر کو یہاں ’پاکستان اور سعودی عرب کے باہمی تعلقات ‘ کے موضوع پرتحریک دفاع حرمین شریفین کے زیر اہتمام منعقدہ سیمنار سے خطاب کرتے ہوئےعلامہ ڈاکٹر نورالحق نے کہا کہ پاکستان کے دوستوں کی فہرست میں سعودی عرب کا نمبر سب سے پہلے آتا ہے۔دونوں ممالک اتحاد امت کی بات کرتے ہیں اور کشمیر، فلسطین اور دیگر بین الاقوامی امور میں ایک دوسرے کی رائے کو تقویت دیتے ہیں، سعودی عرب نے ہر مشکل میں پاکستان کی مدد کی ہے۔ شہزادہ محمد بن سلمان کی آمد سے یہ آزمودہ تعلقات مزید بہتر ہوںگے۔
اس سے قبل مولانا عبدالغفور حیدری نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب نے ہر مشکل میں پاکستان کی مدد کی ہے لیکن جب سعودی عرب کو یمن سمیت کچھ دیگر مسائل میں پاکستان کی مدد کی ضرورت پڑی تو ہم نے کوتاہی کا مظاہرہ کیا۔ اس کے باوجود سعودی عرب نے ہمیشہ ہماری کوتاہیوں کو نظرانداز کیا اور ضرورت کے وقت ایک سچے دوست اور مخلص بھائی کی طرح پاکستان کی مدد کی۔
اسلامی نظریاتی کونسل کے چےئرمین ڈاکٹر قبلہ ایاز نے کہا کہ سعودی عرب نے ہر مشکل میں پاکستان کا ساتھ دیا ہے، پاکستان میں بھی سعودی عرب کو ہر لحاظ سے قدر اور احترام کی نگاہ سے دیکھا جاتاہے۔
جماعت اسلامی کے رہنما آصف لقمان قاضی نے کہا کہ یقینا سعودی عرب کے ساتھ پاکستان کے تعلقات میں معاشی فوائد بھی ہیں لیکن حرمین شریفین کے لئے اہلیان پاکستان کی محبت ہر معاشی نفع سے بالاتر ہے اور جذبہ ایمان پر مبنی ہے۔
سیمنار میں مولانا میرزمان کی طرف سے پیش کردہ ایک قرارد کو بھی متفقہ طور پر منظور کیا گیا جس کے مطابق اہلیان پاکستان سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی پاکستان آمد پرشکریہ ادا کرتے ہیں اور ان کا پر جوش خیرمقدم کرتے ہیں۔
سیمنار سے دفاع حرمین تحریک کے سرپرست اعلیٰ اور سابق چےئرمین سینٹ مولانا عبدالغفور حیدری، صدر شیخ علی محمد تراب، جنرل سیکریٹری مولانا فضل الرحمن خلیل،اسلامی نظریاتی کونسل کے چےئرمین ڈاکٹر قبلہ ایاز،وفاق المدارس العربیہ پاکستان کے ناظم اعلیٰ قاری حنیف جالندھری،جماعت اسلامی کے مرکزی رہنما آصف لقمان قاضی، سابق وفاقی وزیر اور جمعیت علمائے اسلام کے رہنما مولانا میرزمان اور بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی کے صدر ڈاکٹر احمدبن یوسف الدرویش سمیت ملک کی اعلیٰ شخصیات نے بھی خطاب کیا۔

اے پی پی/ احسان /حامد

وی این ایس، اسلام آباد