ڈپٹی اسپیکر سردار بابر خان موسیٰ خیل کی زیرِصدارت بلوچستان اسمبلی کااجلاس

0
55

کوئٹہ, 11 فروری (اے پی پی ): بلوچستان اسمبلی کا اجلاس ڈپٹی اسپیکر سردار بابر موسی خیل کی زیر صدارت میں ہوا ۔ اجلاس میںبلوچستان اسمبلی میں بلدیاتی انتخاب کے انعقاد کے لیے مزید وقت لینے سے متعلق قرارداد منظور کر لی قرارداد میر ظہور بلیدی نے پیش کی قرارداد میں درخواست کی گئی کہ نئی مردم شماری اور حلقہ بندیوں کی وجہ سے بلدیاتی انتخابات میں مسائل کا سامنا ہے ثناءبلوچ نے کہا کہ پارلیمانی طرز حکومت میں برطانیہ، کینیڈا، یورپ اور جنوبی افریقہ میں پارلیمانی اور مقامی حکومتوں کے انتخابات ایک ساتھ ہوتے ہیں۔ایوان نے ترقیاتی محصولات کے قانون کو بھی منظور کیا۔قانون کے تحت ریل، سڑک، فزائی اور سمندری راستے سے صوبے میں آنے والی اشیاءپر محصول آئد کیا جائے گا قانون فوری طور پر صوبے بھر میں نافذالعمل ہوگا۔ایوان میں بلوچستان لازمی تعلیمی خدمات بل بھی منظوری کے لیے پیش کیا گیا۔بل بشری رند نے پیش کیا بل کے تحت پرائمری سے ہائر سیکنڈری تک ہر طرح کی ہڑتال پر پابندی ہوگی ہڑتال کرنے والوں کو ایک سال قید یا پانچ لاکھ روپے جرمانہ جبکہ ہڑتال کی مالی معاونت کرنے والوں کو 6 ماہ قید یا 3 ماہ جرمانے کی سزا دی جاسکتی ہے بل اسٹینڈنگ کمیٹی کے حوالے کر دیا گیا۔ وقفے سوالات میں وزیر صحت نصیب اللہ مری نے بتایا کہ صوبے میں بنیادی صحت اور ڈی ایچ کیو مرکز کی تعداد 8248 ہے، نجی ہسپتال 52 ہیں جن میں سے 5 زیر تعمیر ہیں۔ سول ہسپتال کوئٹہ کے 3 میں سے 2 آپریشن تھیٹر فعال ہیں جبکہ صوبے کے دوسرے بڑے شہر خضدار کے ڈویزنل ہسپتال کی دس میں سے صرف 3 ایمبولینس فعال ہیں،بعدازاں اجلاس 14 فروری تک ملتوی کر دیا۔

اے پی پی /محمد بلال اعوان /شاہ زیب

وی این ایس کوئٹہ