سائنسدانوں،سپارکو، محکمہ موسمیات سمیت دیگر اداروں نے اسلامی کیلنڈر اور مون سائٹ ویب سائٹ تیار کر لی،ویب سائٹ میں قمری کیلنڈر،ہجری کیلنڈر،چاند نکلنے اور اس کی عمر سمیت تمام معلومات رکھی گئی ہیں: چوہدری فواد حسین

0
37

لاہور،26 مئی(اے پی پی ):وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی چوہدری فواد حسین نے کہا ہے کہ سائنسدانوں، سپارکو اور محکمہ موسمیات سمیت دیگر اداروں نے اسلامی کیلنڈر اور مون سائٹ ویب سائٹ تیار کی ہے جس میں قمری کیلنڈر، ہجری کیلنڈر،چاند نکلنے اور اس کی عمر سمیت تمام معلومات رکھی گئی ہیں جس سے بخوبی اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ چاند کی ہیئت کیا ہے اور کہاں نکلے گا۔ ویب سائٹ آج پیر کے روز سے گوگل اور موبائل ایپ پر دستیاب ہو گی جس کے مطابق عید الفطر 5 جون بروز بدھ کو ہو گی۔

وہ اتوار کے روز پاکستان کونسل آف سائنٹیفک اینڈ انڈسٹریل ریسرچ (پی سی ایس آئی آر) کے دورہ کے بعد میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے۔ اس موقع پر ڈائریکٹر پی سی ایس آئی آر ڈاکٹر قرة العین سمیت دیگر اعلیٰ حکام بھی موجود تھے۔وفاقی وزیر نے کہا کہ  وزارت سائنس اینڈ ٹیکنالوجی نے اگست کے مہینے کو سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کا مہینہ ڈکلیئرکر دیا ہے اور عالمی سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کانفرنس بھی منعقد کرائیں گے جس میں عالمی سائنسدان شرکت کرینگے،وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی نے کہا کہ مذہبی تہوار کا عقیدے سے تعلق ہے، مذہبی معاملات کو درست سمت پر لیکر چلنا ریاست کا فرض ہے، وزارت سائنس اینڈ ٹیکنالوجی نے علماءحضرات کی توجہ دلائی ہے کہ سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کی مدد سے چاند کی ہیئت اور نوعیت کا پتا لگایا جاسکتا ہے، سپارکو سمیت دیگر اداروں نے قمری کیلنڈر کی ویب سائٹ تیار کی ہے جس سے بخوبی اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ چاند کی ہیئت کیا ہے اور وہ کہاں نکلے گا جو آج پیر کے روز سے مون سائٹ ویب سائٹ کے نام سے گوگل اور موبائل ایپ پر دستیاب ہو گی جس میں چاند کو ملک کے آٹھ مقامات دیکھا جاسکے گا، پاکستان میں جب چاند نظر آئے گا تو وہ 6.8 آلٹی چیوٹ پر عیاں ہو جائیگا۔ چاند کے متعلق امریکہ، آسٹریلیا اور ناروے کیلئے بھی یہ ویب سائٹ بتا سکے گی، قمری کیلنڈر پانچ سال کی مدت کیلئے بنایا گیا ہے جس کا فائدہ دنیا کے تمام امت مسلمہ کو ہو گا۔

انھوں نے کہا کہ  قمری کیلنڈر کے مطابق عیدالفطر 5 جون 2019ءبروز بدھ کو ہو گی جبکہ آئندہ عید الفطر 24 مئی 2020ءکو ہو گی،معاملہ اسلامی نظریاتی کونسل کو بھی بھیجا ہے، کل منگل کو کابینہ کو بھی ویب سائٹ کے بارے میں بریفنگ دینگے، یہ میری ذاتی رائے ہے کہ چاند کو دیکھنے کیلئے رویت ہلال کمیٹی کی ضرورت نہیں ہے۔

 انہوں نے کہا کہ وزارت سائنس اینڈ ٹیکنالوجی نے ملک کے چاروں صوبوں سے 1500 سائنس سکولوں کو اپ گریڈ کرنے کے عزم کا اظہار کیا ہے، سکولوں میں پینے کا صاف پانی اور سولر سسٹم لا رہے ہیں جس سے توانائی بحران پر قابو پانے میں مدد ملے گی۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کو سائنس و ٹیکنالوجی کی بنیاد پر دنیا کے سامنے لائیں گے، آئندہ تین سالوں میں پاکستان کو سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کی مدد سے ماڈرن ملک بنا دینگے۔

چوہدری فواد حسین نے کہا کہ سائنسی طور پر پاکستان کو پیچھے رکھنے کیلئے کچھ عالمی طاقتیں برسر پیکار ہیں جیسے کالا باغ ڈیم کی تعمیر کیخلاف پروپیگنڈہ پر بھی بیرونی سرمایہ کاری ہوئی۔

قبل ازیں وفاقی وزیر نے پی سی ایس آئی آر لیبارٹری کے مختلف شعبوں کادورہ کیااور حکام کو ضروری ہدایات دیں۔

 وی این ایس لاہور