نئے صوبائی بجٹ میں تمام اسٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لیا جارہا ہے، چار ماہ سے تمام محکمے بجٹ کی تشکیل پر سنجیدگی سے کام کررہے ہیں، صوبائی وزیر خزانہ بلوچستان میر ظہور احمد بلیدی

0

کوئٹہ،12جون(اے پی پی):صوبائی وزیر خزانہ بلوچستان میر ظہور احمد بلیدی نے کہا ہے کہ نئے صوبائی بجٹ میں تمام اسٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لیا جارہا ہے ماضی کی روایات کی طرح بند کمروں میں بجٹ تشکیل نہیں دی گے، تمام معاملات شفاف اور اوپن رکھے جائیں گے گزشتہ تین چار ماہ سے تمام محکمے بجٹ کی تشکیل پر سنجیدگی سے کام کررہے ہیں۔
بلوچستان پری بجٹ پریس بریفنگ سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر خزانہ بلوچستان میر ظہور احمد بلیدی کا کہنا تھا کہ مائنز اینڈ منرلز کوسٹل سائیٹ سمیت اہم شعبوں پر سرمایہ کاری کرکے انہیں آمدنی کے حامل شعبے بنایا جارہا ہے اعلی تعلیم کی ترقی کے لئے گزشتہ حکومتوں میں جامعات کے لئے پانچ سو ملین روپے مختص کئے جاتے تھے جو کہ ہم نے بڑھا کر ایک ارب پچاس کروڑ روپے کرنے کا فیصلہ کیا ہے اس مقصد کے لئے جامعات میں وسائل کی صحیح تقسیم کو یقینی بنانے کے لئے خصوصی کمیٹی بنائی گئی ہے۔
انھوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ خصوصی اقدامات پروگرام کے تحت صوبے میں معیاری تعلیم اور شرح خواندگی میں اضافے کے لئے حکمت عملی مرتب کرلی گئی ہے اس کے علاوہ مالی خود مختاری کے لئے فنانس بل میں ٹیکسوں کی وصولی کا جامع نظام وضع کررہے ہیں جس سے صوبے کے اپنے محاصل میں اضافہ ہوگا۔ بلوچستان میں بڑے منصوبوں کی فنڈنگ کے لئے وفاق سے رجوع کیا گیا ہے اور کوئٹہ ژوب روڈ، کوئٹہ کراچی روڈ، آواران جاہو بیلہ روڈ، ڈیرہ مراد جمالی بائی پاس، تربت،بلید ہ روڈ،لولنگ ڈیم وندر ٹیم سمیت بڑے منصوبوں کے لئے وفاق نے معاونت کے لیے رضامندی ظاہر کردی ہے۔
وزیرخزانہ نے کہا کہ سترہ ہزار خالی آسامیوں پر میرٹ پر بھرتی کرنے جارہے ہیںجس سے بیروزگاری میں بھی خاطر خواہ کمی آئے گی۔ بلوچستان کی تاریخ میں پہلی مرتبہ حقائق پر مبنی قابل عمل بجٹ پیش کرنے جاررہے ۔ حالیہ بجٹ گزشتہ تمام بجٹس سے منفرد ہوگا وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کے ویژن کے عین مطابق بجٹ میں بدعنوانی کے راستے روک دئیے گئے ہیں اور کرپشن پر زیرو ٹالئرنس پائی جاتی ہے۔مجموعی طور پر حالیہ بجٹ گزشتہ روایات سے ہٹ کر ہوگا اور اس کے ثمرات حقیقی طور پر عام آدمی کی زندگی پر نمایاں طور پر محسوس ہونگے۔
سورس: وی این ایس،کوئٹہ