پبلک اکاونٹس کمیٹی کا اجلاس

69

اسلام آباد، ستمبر 14( ا پ پ): قومی اسمبلی کی پبلک اکاونٹس کمیٹی کا اجلاس چئیرمین سید خورشید احمد شاہ کی زیر صدارت جمعرات کوپارلیمنٹ ہاو¿س میںمنعقد ہوا۔
اجلاس میںا وزارت پوسٹل سروسز کی آڈٹ رپورٹ 2014-15 اجلاس میں پیش کی گئی۔ ڈی جی پوسٹل سروسز نے کمیٹی کو آگاہ کیا گیا کہ فراڈ اور دیگر 48 کیسز میں 7کروڑ 73 لاکھ روپے غبن کر دئیے گئے،48 کیسز میں 120 افراد کے خلاف کارروائی ہوئی۔ کمیٹی کو بتایا گیاکہ81 افراد کو نوکری سے برطرف کیا گیا، 36 کو معمولی سزا دی اور 3 کے خلاف کارروائی زیر التوا ہے۔
سیکرٹری مواصلات شاہد تارڑ نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ پوسٹل سروسز میں اصلاحات لائی جا رہی ہیں اور ادارے کو نقصان سے نکالنے کی کوشس کی جا رہی ہے۔
کمیٹی میں آڈٹ رپورٹ پیش کی گئی جس میں بتایا گیا کہ لیاری ایکسپریس وے منصوبے کی لاگت میں 5 ارب روپے سے زیادہ اضافے کا انکشاف ہوا،منصوبہ نومبر 2004 میں 4 ارب 89 کروڑ روپے کی لاگت سے مکمل ہونا تھا، رپورٹ کے مطابق این ایچ اے نے ایکنک کی منظوری کے بغیر منصوبے میں تبدیلی کر دی۔رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا کہ منصوبے کی لاگت بڑھ کر 9 ارب 94 کروڑ تک پہنچ گئی،
محکمانہ اکاو¿نٹس کمیٹی نے بھی لاگت میں اضافے پر تشویش کا اظہار کیا۔ این ایچ اے حکام نے بتایا کہ ایکنک نے پی سی ون میں تبدیلی کی منظوری 17 فروری 2016 کو دی، تاہم نوٹیفکیشن موصول نہیں ہوا،آڈٹ حکام نے منصوبے کی لاگت میں اضافے کی انکوائری کی سفارش کر دی۔
اے پی پی /صائمہ ا ن م/وی این ایس ،اسلام آباد