دفتر خارجہ میں افغان بچے کو افغان حکام کے حوالے کرنے کی تقریب

0
240

اسلام آباد، جنوری ۹۱( ا پ پ): سیکرٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ نے کہا کہ پاکستان کے لئے افغانستان کا ہر بچہ عبید اللہ ہے اور ہم انکا اسی طرح خیال رکھنا چاہتے ہیں،دو سال بعد گم شدہ بیٹا خاندان کو ملا دیا،جس انداز سے عبید اللہ کی حفاظت کی گئی یہ دونوں ممالک کے لوگوں کا ایک دوسرے کے لئے پیار کو ظاہر کرتا ہے۔
جمعہ کودفتر خارجہ میں افغان بچے عبیداللہ کو افغان سفارتخانے کے حکام کے حوالے کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سیکرٹری خارجہ نے کہا کہ پاکستان نے دوستی اور ہمسائیگی کا حق ادا کر دیا، پاکستان افغانستان میں امن اور خوشحالی چاہتا ہے۔ تہمینہ جنجوعہ نے کہا کہ پاکستان کا مقصد پر امن افغانستان ہے، ہم اس مشترکہ مقصد کے لئے افغانستان کیساتھ ملکر کام کرنا چاہتے ہیں۔
اس موقع پرافغان نائب سفیر زردشت شمس کا کہنا تھا کہ اپنی حکومت اور عبید اللہ کے خاندان کی جانب سے پاکستان کا شکریہ ادا کرتا ہوں، عبیداللہ کی حوالگی پر خوش ہیں۔
یاد رہے کہ عبیداللہ 2015 میں اسلام آباد میں گم ہو گیا تھا،جب وہ اپنے باپ کے علاج کیلئے آیا تھا ۔ اسلام آباد پولیس نے بچے کو تلاش کرکے چائلڈ پروٹییشن بیورو کے حوالے کیا ، جس کے بعد کابل میں پاکستانی ہائی کمیشن کی 2 سالوں کی طویل کوشش کے بعد اس کے خاندان والوں کو ڈھونڈا گیا۔
ا پ پ حمزہ ا ن م