زینب کی والدہ کی اے پی پی سے گفتگو

0
156

اسلام آباد، 22 دسمبر (اے پی پی ): قصور سے تعلق رکھنے والی 6 سالہ مقتولہ زینب کی والدہ کا وقتی طور پرجاری تحقیقا ت پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اگر پولیس بر وقت کارروائی کرتی تو زینب زندہ مل سکتی تھی۔
پیر کواے پی پی سے خصوصی بات کرتے ہوئے زینب کی والدہ نے پولیس کی سست روی پر تنقید کی اور کہا کہ واقع ہونے کے 3 دن کے بعد بھی علاقہ سیل نہیں کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ ہماری کسی سے بھی کسی قسم کی کوئی دشمنی نہ تھی اور نہ ہے اور خاندان میں بھی سب میں اتفاق ہے۔
زینب کی والدہ نے کہا کہ کارروائی چل رہی ہے لیکن ابھی تک زینب کا قاتل آزاد گھوم رہا ہے، میری اور پوری قوم کا مطالبہ ہے کہ قاتل کو جلد از جلد پکڑ کرسرے عام سزا دی جائے۔
اے پی پی / صائمہ-احسن ا ن م/وی این ایس، اسلام آباد