زینب کے والد امین کی اے پی پی سے گفتگو

0
95

اسلام آباد، 22 دسمبر (اے پی پی ): قصور سے تعلق رکھنے والی 6 سالہ مقتولہ زینب کے والد امین کا کہنا ہے کہ وہ جے آئی ٹی اور دیگر ایجنسیوں کی کارروائی سے مطمئن ہیں، متعلقہ پولیس اور ایس ایچ او اس واقع میں پوری طرح ذمہ دار ہیں۔
انہوں نے کہا کہ فرانزک رپورٹ سے اتفاق نہیں رکھتے، یقیناً میری بیٹی زینب ہی تھی، اسکے کپڑے وہی تھے جس میں وہ مردہ حالت میں پائی گئی۔
سر عام پھانسی کی سزا سے متعلق انکا کہنا ہے کہ وہ ایسی سزا کے حق میں ہیں اور یہ مطالبہ پوری عوام کا ہے، ماضی میں بھی سر عام پھانسی سے جرائم میں کمی کی مثالیں ملتی ہیں۔
اے پی پی / صائمہ-احسن ا ن م/وی این ایس، اسلام آباد

.