پارلیمانی کمیٹی برائے سی پیک کا اجلاس

0
156

اسلام آباد، جنوری 22 (اے پی پی): پارلیمانی کمیٹی برائے سی پیک کا اجلاس آج مشاہد حسین سید کی زیر صدارت منعقد ہوا جس کے بعد مشاہد حسین سید نے میڈیا کو بریفنگ  بھی دی۔

چین کے نئے سفیر بھی سی پیک پارلیمانی کمیٹی کے اجلاس میں شریک ہوئے اور سی پیک کے حوالے سے بریفنگ دی۔

اس موقع پرچین کے سفیر نے کہا کہ چین کی خارجہ پالیسی کے ستون میں سی پیک شامل ہے۔

چینی سفیر کا کہنا تھا کہ خارجہ پالیسی میں پاکستان چین کا کلیدی ساتھی ہے اس منصوبے کو 2018 میں آگے لیکر جائیں گے ۔

چینی سفیر نے کہا کہ سی پیک منصوبوں کو پائیدار بنانا ہے اور خصوصی اکنامک زون میں نجی شعبے کو ساتھ لےکر چلیں گے۔

انہوں نے کہا کہ سی پیک کا دائرہ صرف چین پاکستان نہیں بلکہ افغانستان اور وسطی ایشیا تک وسیع کرنا ہے نیز سی پیک میں زراعت ، سیاحت ، آئی ٹی اور کلچر کو بھی شامل کر رہے ہیں۔

چینی سفیر نے کہا کہ ہر معاملے پر چین پاکستان کے ساتھ ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ سی پیک کی رفتار درست جا رہی ہے۔ سی پیک کے بعض ارلی ہار ویسٹ منصوبے وقت سے قبل مکمل ہو گئے ہیں ۔

چینی سفیر کا کہنا تھا کہ جنوری کی 29/30 کو گوادر میں ایکسپو ہو گا جس میں 80   نجی اور سرکاری شعبے کی کمپنیاں شریک ہونگی

چینی سفیر نے کہا کہ سی پیک پندرہ سال کا منصوبہ ہے۔ سی پیک کسی شخص، حکومت ، سیاسی جماعت اور ادارے سے بالاتر ہے۔

اے پی پی/سعیدہ/فرح/وی این ایس اسلام آباد