پنجاب یونیورسٹی میں 2 طلبہ گروپوں میں تصادم کے بعد صورتحال قابو میں

0
247

لاہور جنوری 22 (اے پی پی): پنجاب یونیورسٹی میں 2 طلبہ گروپوں میں رات گئے ہونے والے تصادم اور توڑ پھوڑ کے واقعے کے بعد صورتحال قابو میں ہے، دوسری جانب جامعہ پنجاب کے وائس چانسلر نے ذمہ داران کے خلاف سخت ایکشن لینے کا عندیہ دیا ہے۔

پنجاب یونیورسٹی انتظامیہ کے مطابق الیکٹریکل انجینئرنگ ڈپارٹمنٹ میں اسلامی جمعیت طلبہ کی جانب سے آج ہونے والے پائنیر فیسٹیول کی تیاریاں جاری تھیں کہ بلوچ طلبہ گروپ نے رات گئے دھاوا بول کر ڈپارٹمنٹ میں توڑ پھوڑ کی اور ایک کمرے کو آگ بھی لگادی۔

ہنگامہ آرائی کے دوران کئی گاڑیوں کے شیشے بھی توڑ دیئے گئے۔

واقع کی اطلاع ملنے پر پولیس کی نفری موقع پر پہنچ گئی اور طلبا کو منتشر کرکے حالات پر قابو پالیا۔

رات گئے ہونے والے واقعے کے بعد اسلامی جمعیت طلبہ کے کارکنوں نے کنال روڈ پر مظاہرہ کیا اور واقعے پر احتجاج کیا۔

طلباء تنظیم کے کارکنوں نے پولیس کی گاڑی کا گھیراؤ کرلیا، جس سے حالات کشیدہ ہو گئے اور پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے آنسو گیس کی شیلنگ کی، تاہم بعدازاں VNS, Lahore/صورتحال پر قابو پالیا گیا۔