سرسید یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنا لوجی کے بائیسویں کا نووکیشن کا انعقاد

0
73

کراچی،07 فروری(اے پی پی):سرسید یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنا لوجی کا 22واں کا نووکیشن ایکسپو سینٹر میں منعقد ہوا تقریب کے مہمان خصوصی گورنر سندھ عمران اسماعیل تھے۔
یونیورسٹی کے گیار ہ سو پچاس طالبعلموں کو اسناد تفویض کی گئیں اس موقع پر گورنر سندھ نے اپنے میں کہا کہ میں بہت سی یونیورسٹیوں میں جاتا ہوں اور میں نے یہ دیکھا ہے کہ ہماری بچیاں تعلیمی میدان میں واضح برتری قائم کیے ہوئے ہیں ان کا کہنا تھا کہ ہمارے پاس تین طرح کے اسٹیج میسر ہوتے ہیں سب سے پہلا علم کی طاقت ، پیسہ یا نمایاں منصب کی پاور اور جسمانی طاقت اگر انہیں درست سمت میں استعمال کیا جائے تو کامیابی آپ کے قدم چومے گی۔

عمران اسمائیل نے کہا کہ  ناکامی دراصل کامیابی کی شروعات ہوتی ہے بس آپ کو ہمت نہیں ہارنی ہے جس کی واضح مثال ہم آپ کے سامنے ہیں آج بائیس سالوں کی انتھک جدو جہد کے بعد ہم حکومت میں آئے ہیں اور ہم آپ سے وعدہ کرتے ہیں ہم پاکستان کو قرضوں سے نجات دلوائیں گے اس ملک کو صحیح سمت ٹریک پر لائیں گے جسے دیکھ کر آپ فخر سے کہہ سکیں گے کہ یہ ہمارا پاکستان ہے ۔

علاوہ ازیں منسٹر ورکس اینڈ سروسز سید ناصر حسین شاھ نے ایجوکیشن سٹی میں حکومت سندھ کی جانب سے سر سید یونیورسٹی کو الاٹ کی گئی دوسو ایکڑ زمین پر ترقیاتی کام جلدشروع کرنے کی نوید سنائی جبکہ طلبہ کے لیے ایک ہاسٹل بھی تعمیر کرنے کا اعلان کیا ، تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چانسلر جاوید انوار نے کہا کہ مسلم دنیا کی سوچ میں تبدیلی کی ضرورت ہے ہم ابھی تک ماضی سے جڑے ہوئے ہیں اسی سوچ کو بدلنے کے لیے سرسید یونیورسٹی اپنا حصہ ڈال رہی ہے ایک جدید آڈیٹوریم اور ڈیجیٹیل لائبریری قائم کرنے کی منصوبہ بندی کی جا رہی ہے جو کہHECکی آن لائن لائبریری سے منسلک ہو گی۔
اے پی پی/صدیق سنگھار/ شاہ زیب