ملک کو معاشی طور پر مضبوط کرنے کیلئے لانگ ٹرم پالیساں بنارہے ہیں: ڈاکٹر عبد الحفیظ شیخ

0
118

لاہور، ،جون 01 ( اے پی پی): گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور کے ہمراہ مشیر خزانہ ،وزیر مملکت ریونیو اور مشیر ٹیکسٹائل نے 3گھنٹے تک بزنس کیمونٹی سے   گور نر ہاؤس میں  ملاقات کی۔ بزنس کیمونٹی نے  چوہدری محمدسرور، ڈاکٹر عبد الحفیظ شیخ، میاں حماد اظہر  اور عبد لرزاق داؤد کو اپنے مسائل  سے آگاہ ، ملاقات میں بزنس کیمونٹی نے بجٹ کے حوالے سے حکومت کو تجاویز بھی دیں۔

ڈاکٹر عبد الحفیظ شیخ نے کہا کہ ملک کو معاشی طور پر مضبوط کرنے کیلئے لانگ ٹرم پالیساں بنائی جارہی ہیں اور اب  ہم معاشی استحکام کی جانب آرہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ حکومت مشکل فیصلے کر رہی ہے ،آ ئی ایم ایف پروگرام میں جانا اسی سلسلہ کی ایک کڑی ہے۔ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے بتایا کہ آئی ایم ایف کے بعد عالمی بینک اور ایشیائی ترقیاتی بینک سے بھی کم شرح سود پر قرض ملے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ عا لمی اور ایشین ڈویلپمنٹ بینکوں سے 2 تا 3 ارب ڈالر ملنے کی توقع ہے۔مشیر خزانہ   نےمزید بتایا کہ بجٹ میں اولین ترجیح عام آدمی کوریلیف دینا ہے۔

 اس موقع پر بات کرتے ہوئے  گورنر پنجاب  چوہدری  محمدسرور نے کہا کہ حکومت نے بزنس کیمونٹی سے جو بھی وعدے کیے ہیں انکو پوراکر یں گے، ملکی ترقی کیلئے حکومت اور بزنس کیمونٹی ایک پیج پر آچکی ہے ۔

ملاقات میں  گفتگو کرتے ہوئے  وزیر مملکت برائے  ریونیو حماد اظہر  نے کہا کہ وفاق کے  جمع کیے ہوئے ٹیکس کا     57 فیصد صوبوں کو چلا جاتے ہیں۔ انہوں نے آگاہ  کیا  کہ  معاشی چیلنج سے نمٹنے کیلئے ٹیکس ریونیو میں بھی اضافہ ضروری ہے۔

سورس : وی این ایس ، لاہور