آزاد جموں کشمیر کی  حکومت اور حریت قیادت  مشترکہ طور پر عالمی سطح پر مسئلہ کشمیر اجاگر کرنے کی کوششیں کریں: وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر

0
139

اسلام آباد، 05جولائی (اے پی پی ): وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر خان نے کہا کہ آزاد جموں کشمیر حکومت اور آل پاکستان حریت کانفرنس کی لیڈرشپ مشترکہ طور پر عالمی سطح پر مسئلہ کشمیر اجاگر کرنے کی کوششیں کریں ۔

انٹرنیشنل جرنل آف کشمیر سٹڈی کے موضوع پر منعقدہ سیمینار کی افتتاحی تقریب سے بات کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ کشمیریوں نے آزادی مہم کے لئے بےشمار قربانیاں دی ہیں اور انھوں نے مزید کہا کہ پاکستان میں معاشی اور سیاسی استحکام کشمیر کی آزادی میں مدد گار ثابت ہوگا۔پاکستان انڈیا سے پر امن تعلقات رکھنا چاہتا ہے لیکن اس کو کمزور سمجھنا غلط ہے اور لائن آف کنٹرول پر انڈیا کی طرف سے خلاف ورزی قابل مذمت ہے جس کا پاکستان بھرپور جواب دے گا۔انھوں نے کہا کہ انڈیا نے کشمیر میں ظلم وستم کا بازار گرم کر رکھا ہے اور ستر ہزار فوج وہاں نافذ کی ہوئی ہے ۔مقبوضہ کشمیر دنیا کا سب سے بڑا ملٹری زون ہے ۔

انھوں نے یاد کروایا کہ کشمیری لیڈرشپ نے پاکستان کے ساتھ الحاق کرنے کی قرارداد پاکستان بنے سے پہلے منظور کی تھی اور انھوں نے مزید کہا کہ ہم اپنا کیس عالمی سطح پر زیادہ بہتر طریقے سے پیش کر سکتے ہیں ۔انھوں نے کہا کہ انڈیا کشمیر کا ایشویونائیٹڈ سیکیورٹی کونسل میں لے کر گیا تھا لیکن ابھی تک یہ مسئلہ حل نہیں ہوا اور انڈیا کی طرف سے پیش کیا گیا پروپیگنڈہ دنیا بھر میں پھیلایا ہوا ہے جس کا بھرپور جواب دینے کی ضرورت ہے انھوں نے کہا کہ ہم آزاد کشمیر کے علاقے میں تعلیم کو فروغ دینے کے لئے خاص توجہ دے رہے ہیں ۔پاکستان کے وزیراعظم عمران خان بھی خصوصی تعلیم پر توجہ دے رہے ہیں ۔

چئیر مین کشمیر کمیٹی سید فخر امام نے سیمینار سے خطاب میں  انڈیا کی طرف سے لائن آف کنٹرول کی حالیہ خلاف ورزی کی بھرپور مذمت کی جس کی وجہ سے 5پاکستانی جوان شہید ہوئے ۔انھوں نے عالمی سطح پر اپیل کی کہ انڈیا کی طرف سے جارحیت کی وجہ سے خطے کے امن کو لاحق خطرے کا نوٹس لیا جائے اور اس کو روکنے کے لئے اقدامات کئے جائیں۔

 

وی این ایس، اسلام آباد