پاکستان میں فٹ بال کی ترقی سے متعلق سینیٹ کی خصوصی کمیٹی کا اجلاس

0
121

اسلام آباد،03جولائی (اے پی پی): چیئرمین سینیٹ محمد صادق سنجرانی نے کہا ہے کہ پاکستان میں فٹ بال کی ترقی کیلئے عملی اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔فٹ بال سے متعلقہ انتظامی امور کو بہتر بنانے کے ساتھ ساتھ بین الاقوامی تعاون کے حصول کیلئے فیفا(FIFA) سے موثر رابطہ قائم کیا جائے۔ اس سلسلے میں ایک نمائندہ وفد فیفا کی انتظامیہ سے ملاقات کرے گا تاکہ بین الاقوامی تنظیم کو پاکستان میں فٹ بال کو درپیش مسائل اور حقیقی صورتحال سے متعلق آگاہ کیا   جا سکے۔

ان خیالات کا اظہار چیئرمین سینیٹ محمد صادق سنجرانی نے پاکستان میں فٹ بال کی ترقی سے متعلق سینیٹ کی خصوصی کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔

 چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ فٹ بال کی ترقی کیلئے اندرونی اختلافات ختم کر کے عملی اقدامات کیے جائیں اور ملک کے مختلف حصوں میں فٹ بال کا انفراسٹرکچر بہتر کرنے کے علاوہ فٹ بال ٹورنامنٹس کا انعقاد کیا جائے۔ اس سلسلے میں نہ صرف پاکستان فٹ بال فیڈریشن اور پاکستان سپورٹس بورڈ بھر پور تعاون کریں بلکہ نجی شعبے کی خدمات بھی حاصل کی جائیں۔انہوں نے کہا کہ خصوصی کمیٹی قائم کرنے کا مقصد بھی فٹ بال کی ترقی کیلئے تمام متعلقہ اداروں کو ایک پلیٹ فام پر اکٹھا کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پہلی ترجیح ملک بھر میں نجی شعبے کے تعاون سے فٹ بال کے مختلف ٹورنامنٹس کا انعقاد کروانا اور سپورٹس انفراسٹرکچر کی ترقی ہے۔ درکار فنڈز کیلئے نجی شعبے کا تعاون حاصل کیا جائے گا۔

انہوں نے فٹ بال فیڈریشن کو فٹ بال ٹورنامنٹس کے انعقاد کیلئے کیلنڈر مرتب کرنے اور قابل عمل پلان بنانے کی ہدایت کی۔ چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ پاکستان سپورٹس بورڈ بھی فٹ بال کی ترقی کیلئے بھر پور تعاون کرے اور دستیاب وسائل کو بروئے کار لاتے ہوئے فیڈریشن سے بھر پور تعاون کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ ٹورنامنٹس کے انعقاد کیلئے پاکستان سپورٹس بورڈ گراؤنڈز کی فراہمی اور دیگر سہولیات کیلئے ہر ممکن تعاون کرے۔ پاکستان سپورٹس بورڈ کو فٹ بال فیڈریشن کو فوری آفس فراہم کرنے کی ہدایت کی گئی۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ کچھ عرصہ قبل سپریم کورٹ کے احکامات کی روشنی میں پاکستان فٹ بال فیڈریشن کے انتخابات کے نتیجے میں نئی باڈی سامنے آئی ہے۔

صدرپاکستان فٹ بال فیڈریشن اشفاق حسین شاہ نے بتایا کہ فیفا کے ساتھ مختلف امور پر بات چیت ہوئی ہے تاہم ابھی تک بہت سے امور پر پیش رفت نہیں ہوئی۔پاکستان فٹ بال فیڈریشن کو اپنے پاؤں پر کھڑا ہونے کیلئے فنڈز کی ضرورت ہے اور ہم کھیل کی ترقی کیلئے عملی اقدامات اٹھانا چاہتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ فیفا کو پاکستان کے زمینی حقائق سے متعلق آگاہ کیا ہے۔

اس موقع پر گفتگو کر تے ہوئے سینیٹر احمد خان نے کہا کہ ہمیں اندرونی اختلافات اور دیرینہ مسائل سے آگے بڑھ کر فٹ بال کی ترقی کیلئے اقدامات کرنا ہونگے۔سینیٹر ڈاکٹر اسد اشرف نے کہا کہ ہمیں تمام شعبوں کی مشاورت سے مستقبل کا لائحہ عمل مرتب کرنا ہوگا۔ سینیٹر مرزا محمد آفریدی نے کہا نجی شعبہ بھر پور تعاون کیلئے تیار ہے تاہم ان کے سامنے فٹ بال کی ترقی کا منصوبہ رکھنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں پاکستان سپورٹس بورڈ اور پاکستان فٹ بال فیڈریشن کے مابین بہتر ورکنگ ریلیشن شپ کی ضرورت ہے۔

 چیئرمین سینیٹ محمد صادق سنجرانی نے سینیٹر مرزا محمد آفریدی کی سربراہی میں ذیلی کمیٹی تشکیل دی جو متعلقہ اداروں کی مشاورت سے فٹ بال کی ترقی کیلئے دو ہفتے میں ایک جامع منصوبہ مرتب کرے گی۔کمیٹی کے آئندہ اجلاس میں وفاقی وزیر بین الصوبائی رابطہ کے علاوہ پاکستان کے نمایاں کاروباری ادروں کے نمائندوں کو بلایا جائے تاکہ فٹ بال کی ترقی کیلئے اقدامات پر موثر پیش رفت ہو سکے۔

اس موقع پر چیئرمین سینیٹ نے سینیٹر بیرسٹر محمد علی خان سیف کو وزارت بین الصوبائی رابطہ اور پاکستان فٹ بال فیڈریشن کے ساتھ مل کر فیفا سے متعلق امور حل کرنے کیلئے لائحہ عمل مرتب کرنے کی بھی ہدایت

اجلاس میں سینیٹرز ڈاکٹر اسد اشرف، مرزا محمد آفریدی،احمدخان،سینیٹربیرسٹرمحمدعلی خان سیف،صدر پاکستان فٹ بال فیڈریشن اشفاق حسین شاہ، ڈائریکٹر جنرل پاکستان سپورٹس بورڈ عارف ابراہیم اور فٹ بال سے متعلق دیگر اداروں کے نمائندوں نے شرکت کی۔

سورس: وی این ایس اسلام آباد