یوم آزادی کے موقع پر پروفیسر فتح محمد ملک کی اے پی پی سے خصوصی گفتگو

0
55

اسلام آباد،09 اگست (اے پی پی ): پروفیسر فتح محمد ملک  نے کہا ہے کہ تحریک پاکستان  مسلمانوں کے جداگانہ تہذیبی اور قومی تشخص کے اظہار کی تحریک تھی اور مسلمانوں نے طے کیا کہ ہم متحدہ ہندوستان   میں نہیں  رہیں گے ،ہم اپنا الگ وطن  بنائیں گے ۔

یوم  آزادی کے موقع پر اے پی پی سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے  ان کا کہنا تھا کہ اسلام اس تصور کا علمبردار ہے کہ تمام لوگ برابر ہیں جبکہ ہندوستان طبقوں  میں تقسیم تھا ۔

انہوں نے کہا کہ ہندوستان اس وقت   اہم حکومتی  عہدوں  اور کاروبار میں ہندواکثریت کا غلبہ تھا ، ایسے میں پر امن راستہ یہ تھا کہ تصادم سے بچنے کے لیے جن علاقوں میں مسلمانوں کی اکثریت تھی وہاں الگ ملک قائم  کیا  جائے ۔

پروفیسر فتح محمد ملک   نے کہا کہ پاکستان کا تصور 1930 میں اقبال نے دیا 1940 میں  اسی تصور پاکستان کو قرارد پاکستان  کی شکل دی گئی اور 1947 تک اسی قراردا پاکستان کو بنیا د بنا کر برصغیر  کے مسلمانوں  نے فیصلہ کیا کہ ہم  متفقہ  ہندوستان میں نہیں رہیں گے بلکہ اپنے  لیے ایک الگ وطن  پاکستان  بنائیں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ موجودہ دور میں پاکستان کو ایک کامیاب ریاست بنانے کیلئے ضروری ہے  کہ  ہم قرارد پاکستان   کو  عملی طور پر یہاں  نافذ کریں ۔

سورس : وی این ایس ، اسلام آباد