وزیراعظم عمران خان خبر پختونخوا کو بجلی کی خالص آمدن مںن اپنا حصہ دینے کلئے بہت مخلص ہںک،شوکت علی یوسفزئی

0
156

پشاور،22ستمبر(اے پی پی):خیبر پختونخوا کے وزیر اطلاعات وتعلقات عامہ شوکت علی یوسفزئی نے کہا ہے کہ وزیرِ اعظم عمران خان نے اے جی اینڈ قاضی فارمولا کے تحت صوبہ کو بجلی کی خالص آمدن دینے کیلئے وفاقی وزیر خسرو بختیار کی سربراہی میں کمیٹی بنائی تھی، کمیٹی کی سست روی کی وجہ سے اس کے سربراہ کو تبدیل کرنا پڑا، وزیراعظم عمران خان صوبے کو اپنا حصہ دینے کیلئے  بہت مخلص ہیں اور ہمیشہ کوشش کی ہے کہ صوبہ کو سپورٹ کرے کیونکہ خیبرپختونخوا نے پہلے پاکستان تحریک انصاف کو حکومت دلایا اور اسی وجہ سے ہی مرکز میں پاکستان تحریک انصاف کی حکومت ہے۔

آفتاب خان شیرپاؤ کے پریس کانفرنس پر رد عمل دیتے  ہوئے  صوبائی وزیر نے کہا کہ آفتاب شیرپاؤ وزیر داخلہ رہ چکے ہیں اور وزیر اعلیٰ بھی رہ چکے ہیں تب اس نے صوبہ کیلئے  کیا کیا ،صوبے کے حقوق کیلیے آواز نہیں اٹھائی،پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے خیبر پختونخوا کیلیے آواز اٹھائی اور رشکی اکنامک زون اور جنوبی روٹ منظور کرایا، جس پر کام جاری ہے جس سے صوبہ بہت ترقی کرے گا۔

انہوں نے کہا کہ مخالفین نے قبائلی اضلاع کے بارے میں کہا تھا کہ یہ انضمام نہیں ہو سکتا، عدالتی نظام قبائل تک نہیں جا سکتا قبائلی علاقوں میں صوبائی انتخابات نہیں ہو سکتے لیکن صوبائی حکومت کے پرعزم ارادے نے  یہ کام کرکے دکھایا اور آج قبائل مکمل طور پر صوبے میں شامل ہیں۔

شوکت یوسفزئی نے کہا ہے وزیراعظم عمران خان نے قبائلی علاقوں کیلیے ڈیڑھ سو ارب روپے منظور کیے ہیں جن سے ان علاقوں میں بہت ترقی ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ سابق حکومتوں نے ملک پر 30 ہزار ارب روپے قرض چڑھایا ہے اب وہی لوگ سمجھتے ہیں کہ عمران خان کے پاس جادو کی چھڑی ہے جس کے گمانے سے قرضے ختم ہو جائیں گے۔ قوم اور عمران خان چاہتے ہیں کہ قرضہ ختم ہو جس کیلئے  حکومت نے اپنے اخراجات کم کر دیے ہیں قوم بہادر ہے اور عمران خان کے ساتھ ہیں۔

مولانا فضل الرحمان کے دھرنے کے حوالے سے بات کرتے ہوئے صوبائی وزیر نے کہا کہ اگر وہ اتنا کام دین کیلئے کرتے تو بہت اچھا ہوتا لیکن بدقسمتی سے وہ چور لٹیروں کو آزاد کرانے کیلئےلگے ہوئے ہیں جس میں وہ مکمل طور پر ناکام ہونگے۔ مولانا کوئی نہ کوئی مذہبی ایشو بنائیں گے لیکن ملک کے تمام مذاہب میں مکمل ہم آہنگی ہے اور تمام مسالک آزادہیں اور اس دھرنے سے مولانا کی سیاست ختم ہو جائے گی۔

سورس: وی این ایس، پشاور