وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کی سینیگال  کے وزیر خارجہ  احمدوبا سے  ملاقات

0
49

جنیوا(سوئٹزرلینڈ)،10ستمبر(اے پی پی ):وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے   جنیوا میں جاری انسانی حقوق کونسل کے اجلاس کے موقع پر سینیگال  کے وزیر خارجہ  احمدوبا سے  ملاقات کی ، جس دوران مقبوضہ جموں و کشمیر کی تشویشناک صورتحال اور خطے میں امن و امان کو درپیش خطرات پر تبادلہ ء خیال کیا گیا۔

مخدوم شاہ محمود قریشی نے اس موقع پر کہا کہ پاکستان افریقی ممالک کے ساتھ اپنے تعلقات کو مزید فروغ دینے کا خواہاں ہے ،انسانی حقوق کونسل کی صدارت کا منصب سینیگال کے پاس ہونے کے سبب ،ہمیں آپ سے بہت سی توقعات وابستہ ہیں۔

ملاقات میں وزیر خارجہ نے سینیگال کے وزیر خارجہ کو بھارت کی جانب سے مقبوضہ جموں و کشمیر میں  اٹھائے گئے یکطرفہ بھارتی اقدامات اور انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں سے آگاہ کیا۔انہوں نے  کہا کہ بھارت نے 5 اگست سے لیکر آج تک مقبوضہ جموں و کشمیر کے لاکھوں نہتے انسانوں پر مسلسل کرفیو لگا کر محصور کر رکھا ہے۔ بھارتی فورسز رات کی تاریکی میں گھروں میں گھس کر بچوں اور نوجوانوں کو جبراً اغواء کر کے بدترین تشدد کا نشانہ بنا رہے ہیں۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ بین الاقوامی میڈیا اور انسانی حقوق کی تنظیموں نے مقبوضہ جموں و کشمیر میں جاری بھارتی مظالم کا پردہ چاک کر دیا ہے۔اقوام متحدہ ہیومن رائٹس ہائی کمشنر آفس کی جون 2018 اور جولائی 2019 کی رپورٹس ، انتہائی تشویشناک صورتحال کی نشاندہی کر رہی ہیں۔انہوں  نے مزید کہا کہ مقبوضہ جموں و کشمیر کے نہتے انسانوں کو بھارتی بربریت سے نجات دلانے کے لیے عالمی برادری کو آگے آنا ہو گا۔

سینیگال کے وزیر خارجہ احمدوبا نے اس مقبوضہ کشمیرکی  صورتحال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ ساری صورتحال پر گہری نظر رکھے ہوئے ہیں۔

وی این ایس، اسلام آباد