ڈینگی کیسز کی شرح 20 سے کم ہو کر 5فیصد ہو چکی،منفی پروپیگنڈہ پھیلانے والوں کخلا ف کاروائی ہو گی :محمود خان

0
107

پشاور، 12ستمبر(اے پی پی): وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے صوبے بھر میں ڈینگی بخار کی روک تھام کےلئے موثر حفاظتی اقدامات اُٹھانے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ سوشل میڈیا پر ڈینگی کے متعلق منفی پروپیگنڈے اور افواہیں پھیلانے والوں کے خلاف کاروائی کی جائے اور ڈینگی وائرس کو مزید پھیلنے کی روک تھام کیلئے پورے صوبے میں باقاعدگی سے مچھر مار سپرے کیا جائے ۔

 وہ وزیراعلیٰ ہاﺅس پشاور میں ڈینگی وائرس کی روک تھام کے حوالے سے ایک خصوصی اجلاس کی صدارت کر رہے تھے ۔ اجلاس کو صوبے بھر میں ڈینگی کے حوالے سے بریفنگ میں بتایا گیا کہ اب تک صوبے بھر میں مجموعی طور پر 1889 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جن میں سے صرف 891 افراد میں ڈینگی وائرس کی تصدیق ہو ئی ہے جبکہ اب تک ڈینگی وائرس سے صوبے بھر میں ایک بھی موت نہیں ہوئی۔

 اجلاس کو بتایا گیا کہ پرائیوٹ لیبارٹریز بے جا منافع خوری کیلئے عوا م میں ڈینگی کے حوالے سے خوف و ہراس پھیلا رہی ہیں جبکہ ڈینگی کی تشخیص کیلئے ان لیبارٹریز کے پاس نہ مناسب آلات ہیں اور نہ ہی پیشہ وارانہ سٹاف مو جود ہے ۔

اجلاس کو مزید بتایا گیا کہ مریضوں میں ڈینگی وائرس کی تشخیص کیلئے تمام سرکاری ہسپتالوں میں خصوصی ڈینگی سیل قائم کئے گئے ہیں جہاں پر مریضوں میں ڈینگی وائرس کی معیاری تشخیص اور مریضوں کے علاج کیلئے عملہ موجود ہو تا ہے جبکہ اب ڈینگی کے تصدیق شدہ کیسز کی شرح میں نمایاں کمی ہوئی ہے جوبیس فیصد سے کم ہو کر اب تقریبا ً پانچ فیصد پر پہنچ چکی ہے۔

سورس: وی این ایس، پشاور