بریسٹ کینسرکی جلد تشخیص سے علاج سوفیصد ممکن ہوجاتاہے: ڈاکٹر یاسمین راشد

0
27

لاہور، 14 اکتوبر(اے پی پی):   صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے  کہا ہے  کہ لوگوں کو کسی بھی بیماری کے بارے میں آگاہی دینابڑی نیکی ہے۔  بریسٹ کینسرکی جلدتشخیص  سے علاج سوفیصد ممکن ہوجاتاہے۔

جناح میڈیکل یونیورسٹی میں بریسٹ کینسرکی مناسبت سے منعقدہ آگاہی سمپوزیم میں بطورمہمان خصوصی شرکت  کرتے ہوئے   اپنے خطاب میں ان کا کہنا تھا کہ 2018  کے اعدادوشمارکے مطابق پوری دنیامیں بیس لاکھ خواتین بریسٹ کینسرکی بیماری میں مبتلاہوئیں۔  انھوں نے کہا کہ پاکستان میں ہرسال ہزراوں خواتین اس مرض کی وجہ سے جان کی بازی ہارجاتی ہیں۔ بریسٹ کینسر کی  آگاہی سے خواتین کواس مرض سے بچایاجاسکتاہے۔

   وزیر صحت نے کہا کہ فاطمہ جناح میڈیکل یونیورسٹی کے طلباء وطالبات کیلئے ہرقسم کی علمی سہولت فراہم کی جائے گی۔ انھوں نے کہا کہ بریسٹ کینسرسے متاثرہ خواتین کی ذاتی زندگی بری طرح متاثرہوتی ہے۔انہوں نے کہا کہ  معاشرہ میں بریسٹ کینسر کے بارے  میں شعورپیداکرنے کیلئے آگاہی سیمینارمنقعدکروائے جانے چاہیے جبکہ پروفیسرڈاکٹرعندلیب نے  بھی بریسٹ کینسرکی وجوہات، علامات اورسدباب  کے بارے میں  تفصیل  سے آگاہ کیا۔

اس موقع پر وائس چانسلرفاطمہ جناح میڈیکل یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹرعامر زمان خان، بریسٹ کینسرپروگرام کی انچارج پروفیسر ڈاکٹر عندلیب اور  دیگرفیکلٹی ممبران اورطلباء وطالبات کی کثیرتعدادنے شرکت کی۔

 وی این ایس ، لاہور