صوبائی وزیرمحنت و انسانی وسائل انصرمجیدخان کی زیرصدارت پنجاب ایمپلائزسوشل سکیورٹی انسٹی ٹیوشن ہیڈآفس میں گورننگ باڈی کے ایک سوچوالسویں اجلاس کاانعقاد

0
33

لاہور، 09 اکتوبر(اے پی پی): صوبائی وزیرمحنت و انسانی وسائل انصرمجیدخان کی زیرصدارت پنجاب ایمپلائزسوشل سکیورٹی انسٹی ٹیوشن ہیڈآفس میں گورننگ باڈی کے ایک سوچوالسویں اجلاس کاانعقاد ہوا۔اس موقع پرصوبائی سیکرٹری محکمہ محنت و انسانی وسائل سارہ اسلم، وائس کمشنرپی سی کلثوم ثاقب، محکمہ فنانس سے منظوراحمد، انڈسٹری کامرس اینڈانویسٹمنٹ سے عرفان سرور، سپیشلائزڈہیلتھ کیئراینڈمیڈیکل ایجوکیشن سے اخترجاوید، میڈیکل ایڈوائزرپیسی ثناءاللہ خان، نیسلے پاکستان سے وقاراحمد، عائشہ ٹیکسٹائل سے عبدالماجد، نائب صدر پاکستان ورکرزفیڈریشن شہزادانور اورجنرل سیکرٹری آل پاکستان ٹریڈیونین فیڈریشن عائمہ محمودموجودتھیں۔ وائس کمشنرپنجاب ایمپلائزسوشل سکیورٹی انسٹی ٹیوشن کلثوم ثاقب نے اجلاس کے حاضرین کوایجنڈاسے آگاہ کیا۔اجلاس کے دوران پنجاب میں انسپیکشن فری ری جیم کی پرپوزل پرمشاورت کی گئی۔ وزیرمحنت وانسانی وسائل انصرمجیدخان نےاجلاس کے حاضرین سے اظہار گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے لئے سب سے اہم مزدودروں کے  حقوق کاتحفظ ہےسول پنشنرزکے پیشن میں اضافہ کی گرانٹ پہلے ہی منظورکی جاچکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ گریڈایک کے ملازمین کی اپ گریڈیشن کے احکامات جاری کردیئے گئے ہیں پنجاب ایمپلائزسوشل سکیورٹی انسٹی ٹیوشن کے ملازمین کے ایڈہاک ریلیف فنڈ کی گرانٹ کی منظوری کے احکامات بھی جاری کردئے گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ مزدوروں کے بچوں کومعیاری تعلیم کی فراہمی کویقینی بنایاجارہاہےپہلی حکومتوں نے مزدوروں کے حقوق پرصرف ذاتی مفادات کی سیاست کی۔ انصرمجیدخان نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کے ویژن کے مطابق مزدوروں کوان کے بنیادی حقوق کاتحفظ دےرہے ہیں انڈسٹری کواعتمادمیں لے کرمزدوروں کی فلاح و بہبود کویقینی بنایاجائیگا۔انہوں نے مزید کہا کہ محکمہ کوآٹومیشن پرلاکرہی کرپشن کے لعنت کوختم کیاجاسکتاہے لیبرانسپکٹرزکی کارکردگی کارکنان کی رجسٹریشن پرمبنی ہوگی ناقص کارکردگی کے حامل لیبرانسپکٹرزکوہٹادیاجائیگا۔

سورس: وی این ایس، لاہور