وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے ضلع چکوال اور ضلع جہلم کیلئے صحت انصاف کارڈ پروگرام کا افتتاح کردیا

0
35

لاہور، 9 اکتوبر (اے پی پی): وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے آج چکوال میں ضلع چکوال اور ضلع جہلم کیلئے صحت انصاف کارڈ پروگرام کا افتتاح کیا۔وزیراعلیٰ نے چکوال اورجہلم کے مستحق افراد میں صحت انصاف کارڈ تقسیم کئے۔قبل ازیں وزیراعلیٰ نے چکوال کے لئے مختلف منصوبوں کا افتتاح کیا اورسنگ بنیاد رکھا۔وزیراعلیٰ نے گورنمنٹ ڈگری کالج برائے خواتین بھاگوال کا افتتاح کیا۔یہ کالج 11کروڑ 18 لاکھ روپے سے تعمیر کیا گیا ہے۔وزیراعلیٰ نے ڈھوک ٹاہلیاں جھیل میں انٹرٹینمنٹ پارک اور واٹر سپورٹس کے منصوبے کا سنگ بنیاد رکھا۔ انٹرٹینمنٹ پارک اور واٹر سپورٹس کے منصوبے پر 10 کروڑ روپے لاگت آئے گی۔وزیراعلیٰ نے گورنمنٹ پوسٹ گریجوایٹ کالج چکوال کے بی ایس بلاک کی تعمیر کے منصوبے کا سنگ بنیاد رکھ دیا۔بی ایس بلاک کی تعمیر پر 16 کروڑ روپے لاگت آئے گی۔ وزیراعلیٰ نے چکوال کی دھارابی جھیل میں ریزارٹ اور رابطہ سڑک کی تعمیر کے منصوبے کا سنگ بنیاد رکھا۔یہ منصوبہ 8 کروڑ روپے سے مکمل ہوگا۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے چکوال میں منصوبوں کے افتتاح اورچکوال و جہلم کے مستحق افراد میں صحت انصاف کارڈ پروگرام کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج عوام کی خدمت کے ایک اور وعدہ پورا ہونے پر اطمینان محسوس کررہاہوں۔صحت انصاف کارڈ مستحق افراد کیلئے مفت علاج کا بہت بڑا پروگرام ہے اوراس کارڈ کے ذریعے مستحق افراد 7 لاکھ 20 ہزار روپے تک کا علاج کرا سکتے ہیں جبکہ ضرورت پڑنے پر یہ رقم دوبارہ بھی مستحق افراد کو دی جائے گی۔رواں برس تک صحت انصاف کارڈ کے ذریعے صوبے کے سوا 3کروڑ افراد مستفید ہوں گے اوراس کارڈ کے ذریعے صوبے کی مجموعی آبادی کے30فیصد حصے کو بہترین ہیلتھ کور فراہم کیا جائیگا۔صحت انصاف کارڈ ہولڈر ایمرجنسی سمیت 8بڑی بیماریوں کا علاج کروا سکے گا۔ضلع چکوال کے 4لاکھ 36ہزار سے زائدافراد صحت انصاف کارڈ سے مستفید ہوں گے اورضلع کی 29فیصد آبادی کو ہیلتھ کورفراہم کیا جائے گاجبکہ ضلع جہلم میں 27فیصد آبادی کو ہیلتھ کور حاصل ہوگا اور ضلع جہلم کے 3لاکھ30ہزار سے زائد افراد صحت انصاف کارڈ سے مستفید ہوں گے۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت نے ایک برس کے دوران ہسپتالوں میں 9 ہزار بیڈز کا اضافہ کیا ہے۔ ہماری حکومت صوبے میں 9 نئے ہسپتال بنا رہی ہے جبکہ گزشتہ 26 برس سے کسی حکومت نے نئے ہسپتال بنانے پر توجہ نہیں دی۔ ہیلتھ کے بجٹ میں 30 فیصد ریکارڈ اضافہ کیا ہے۔ چکوال کیلئے رواں سال کے سالانہ ترقیاتی پروگرام میں 99 ترقیاتی منصوبے شامل ہیں اوران منصوبوں کی تکمیل پر ساڑھے26ارب روپے سے زائدصرف ہوں گے۔ میں نے آج گورنمنٹ ڈگری کالج برائے خواتین بھاگوال کا افتتاح کیا ہے جبکہ ڈھوک ٹاہلیاں جھیل میں انٹرٹینمنٹ پارک اور واٹر سپورٹس کے منصوبے، گورنمنٹ پوسٹ گریجوایٹ کالج چکوال کے بی ایس بلاک کی تعمیر کے منصوبے اورچکوال کی دھارابی جھیل میں ریزارٹ اور رابطہ سڑک کی تعمیر کے منصوبے کا سنگ بنیاد رکھا ہے۔انہوں نے کہا کہ عوام کی خدمت، خوشحالی،فلاح وبہبود اورترقی کے عہد کو ہر قیمت پر نبھائیں گے۔ چکوال کو اپنے گھر کی طرح سمجھتا ہوں،اسے ترقی کے سفر میں شامل کریں گے۔چکوال کی ایک ایک تحصیل میں جا کر مسائل کا خود جائزہ لوں گا۔وزیراعلیٰ نے لاوا میں تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال تعمیر کرنے کے منصوبے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ افسوس کی بات ہے کہ 10 برس گزر گئے لیکن تحصیل لاوا میں ہسپتال نہیں بن سکا۔ ماضی کی حکومت نے تحصیل لاوا کے عوام کیساتھ ہسپتال نہ بنا کر زیادتی کی۔وزیراعلیٰ نے چکوال میں نیا ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال بنانے کابھی اعلان کیااورکہا کہ ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال چکوال کی حالت اچھی نہیں۔ ہم چکوال میں نیا ڈی ایچ کیو ہسپتال بنائیں گے۔انہوں نے کہاکہ چکوال میں یونیورسٹی کے قیام کا بل منظور ہو گیا ہے، دوبارہ یہاں آ کر سنگ بنیاد رکھوں گا۔ وزیراعلیٰ نے پنجاب میں 100 تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتالو ں کی ایمرجنسیز کو اپ گریڈ کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ان 100 تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتالوں میں ٹراما کی سہولت بھی میسر ہوگی۔انہوں نے کہا کہ چکوال میانوالی روڈ کو 2 رویہ بنانے کے منصوبے کو سالانہ ترقیاتی پروگرام میں شامل کر لیا گیا ہے۔ پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت 8 ارب روپے چکوال میانوالی روڈ کیلئے مختص کئے گئے ہیں۔ترقی کا سفر جاری رہے گا۔جتنے پراجیکٹس کا اعلان کیا ہے انکی نگرانی خود کرونگا۔راجن پور سے صحت انصاف کارڈ کا آغاز کیااور آج ہم چکوال اورجہلم کیلئے یہ کارڈز فراہم کررہے ہیں۔ اب صحت انصاف کارڈ کا پروگرام 30 اضلاع میں شروع ہوچکا ہے۔ صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پینل پر شامل نجی ہسپتالوں میں 15ہزار بیڈزشامل کیے جائیں گے۔صحت انصاف کارڈ کیلئے مخصوص شکایت سیل بنائیں گے۔صحافیوں اورریٹائرڈورکرز کو بھی صحت کارڈ دیں گے۔انہوں نے بتایا کہ صحت انصاف کارڈ کے ذریعے راجن پور کے 100افراد دل کے آپریشن کراچکے ہیں۔صوبائی وزیر معدنیات عمار یاسرنے کہا کہ امید ہے کہ عثمان بزدار دیرینہ مسائل حل کریں گے کیونکہ وہ انتہائی محنت سے صوبے کے عوام کی خدمت کررہے ہیں۔صوبائی وزیر ہائر ایجوکیشن راجہ یاسر ہمایوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ کا شہیدوں کی سرزمین پر خیر مقدم کرتے ہیں۔صوبائی وزراء ڈاکٹر یاسمین راشد، یاسر ہمایوں، عمار یاسر، اراکین قومی و صوبائی اسمبلی سالک حسین،سردار ذوالفقار، آفتاب اکبر، یاور کمال، فوزیہ بہرام، آسیہ امجد،سیکرٹریز سپیشلائزڈ ہیلتھ اینڈ میڈیکل ایجوکیشن،کھیل و سیاحت،کمشنرراولپنڈی اور اعلیٰ حکام بھی اس موقع پر موجود تھے۔

سورس: وی این  ایس، لاہور