پوری قوم اور بالخصوص نوجوانوں ہر تیسرے ماہ باقاعدگی سے خون کا عطیہ دینے کا اہتمام کریں:صدر مملکت

0
74

اسلام آباد ، 8 اکتوبر (اے پی پی): صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے پوری قوم اور بالخصوص نوجوانوں پر زور دیا ہے کہ وہ ہر تیسرے ماہ باقاعدگی سے خون کا عطیہ دینے کا اہتمام کریں، یہ انسانیت کی بڑی خدمت ہے، جس کا زندگی اور آخری دونوں میں بہت فائدہ ہو گا، پاکستان کے لوگ بہت مخیر ہیں اور ضرورتمندوں کا دل کھول کر مدد کرنا مسلمانوں کی میراث ہے۔

وہ پاکستان ہلال احمر سوسائٹی کے زیر اہتمام 2005ءکے زلزلہ متاثرین کی یاد میں منعقدہ تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔ صدر مملکت نے کہا کہ پاکستانی قوم کا مزا ج ہے کہ وہ کوئی بھی نیک کام رکنے نہیں دیتے اور اس میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیتے ہیں، 2005ءکے زلزلہ کے فوراً بعد لوگوں کا ردعمل ہمارے سامنے ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے ہر شہر سے لوگ امدادی سامان لے کر متاثرین کی مدد کے لئے نکل پڑے تھے، گاڑیوں کی لمبی لمبی قطاریں لگ گئیں اور 15-20 گھنٹے ٹریفک جام رہتا تھا جو عوام کے متاثرین کے لئے امداد کے جذبہ کا عکاس تھا۔

صدر مملکت نے کہا کہ یہ ابھرنے والی قوموں کی علامت ہے، پاکستان نے 30-35 لاکھ افغان مہاجرین کی میزبانی کی، اسے بڑے مسائل بھی درپیش رہے لیکن کبھی اس کے خلاف آواز نہیں اٹھی، آج ترکی بھی 30 سے 35 لاکھ شامی مہاجرین کی میزبانی کر رہا ہے، یہ مسلمانوں کی میراث ہے کہ وہ تنگی برداشت کر کے بھی دوسروں کی مدد کرتے ہیں، ہمارے پیارے نبی ﷺ نے خود تکالیف برداشت کیں لیکن ضرورت مندوں کی ہمیشہ مدد کی، یہ ہمارے لئے مثالیں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ترکی کی جانب سے بلڈ کلیکشن وین فراہم کرنے پر ترکی کے صدر رجب طیب اردوان اور ان کی اہلیہ کا شکریہ ادا کرتا ہوں، پاکستان اور ترکی کے لوگوں کا تعلق بہت گہرا اور تاریخی ہے۔ صدر مملکت نے کہا کہ بلڈ کلیکشن وین کا یہ ماڈل صوبوں تک بڑھایا جانا چاہیے تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگوں تک رسائی کے لئے اس سے استفادہ کیا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ صحت سے متعلق مسائل پر ہماری مکمل توجہ ہے، ملک میں چھاتی کے کینسر سے بچاﺅ کے حوالے سے آگاہی مہم جاری ہے، معاشرے کے تمام طبقات کو اس کے لئے کوششیں کرنی چاہئیں، صحت کے حوالے سے مسائل کے حل کے لئے علمائے کرام کا کردار بہت معاون ثابت ہو سکتا ہے۔

وی این ایس، اسلام آباد