گاؤں کے سارے سیاسی چوہدری مر جائیں مولانا فضل الرحمن کو اقتدار نہیں مل سکتا ،مذاکرات کے دروازے بند کرنا جمہوریت پر شب خون مارنے کے مترادف ہے: شیخ رشید احمد

0
31

لاہور، 19 اکتوبر(اے پی پی ): وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ 27 اکتوبر کا دھرنا ابھی گرے لسٹ میں ہے،گاؤں کے سارے سیاسی چوہدری مر جائیں، مولانا فضل الرحمن کو اقتدار نہیں مل سکتا، حالیہ نازک وقت میں مذاکرات کے دروازے بند کرنا جمہوریت پر شب خون مارنے کے مترادف ہے، مولانا فضل الرحمن اسلام آباد کی بھوک میں دینی طاقتوں کو خراب نہ کریں، امید ہے 21 سے 26 اکتوبر کے درمیان حالات بہتر رخ اختیار کریں گے، ممکن ہے دھرنا نہ ہو اور فیس سیونگ کا راستہ نکل آئے، وہ ہفتہ کے روز ریلوے ہیڈ کوارٹر زمیں پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے، وفاقی وزیر نے کہا کہ ملک میں اس وقت سیاست زورو شورپر ہے اور جس وقت کشمیر کی جدوجہد آزادی کے حق میں اور ہٹلر مودی کیخلاف میڈیا کے ذریعے قوم کی ترجمانی ہو رہی تھی، ایسے وقت میں دھرنا کا چرچا تشویشناک ہے، انہوں نے کہا کہ 27 اکتوبر کا دھرنا ابھی گرے لسٹ میں ہے اور مولانا فضل الرحمن جن کے اشارے پر کھیل رہے ہیں ان کی سیاست تباہ ہونے جارہی ہے، انہوں نے کہا کہ نازک وقت میں مذاکرات کے دروازے بند کرنا جمہوریت پر شب خون مارنے کے مترادف ہے، اس بار جمہوریت پر شب خون مارا گیا تو پھر ان کے کیسز کے فیصلے جھٹ منگنی بیاہ کی طرح ہوں گے اور اس کی 4 سے 6 سو لوگ بھینٹ چڑھیں گے، وفاقی وزیر نے کہا کہ اس وقت دھرنا دھندلا ہے، فضل الرحمن کو فیس سیونگ دےنے کا فیصلہ پارلیمانی کمیٹی کریگی‘ مولانا فضل الرحمان کو یہ پتہ ہونا چاہئے کہ یہ وہی نواز شریف ہیں کہ 36 جماعتوں نے الیکشن کے بائیکاٹ کا فیصلہ کیا لیکن نواز شریف خود انتخابات میں کود پڑے اور بینظیر بھٹو کو بھی سیاسی طور پر استعمال کیا، وفاقی وزیر نے کہا کہ انہیں مولانا فضل الرحمن سے زیادہ دینی مدارس اور علماءکی فکر ہے، پہلے ہی دینی مدارس مغربی میڈیا کی زد میں ہیں، مدارس دین کے مینار ہیں، مولانا فضل الرحمن جس طرح ڈنڈا بردار دکھا رہے ہیں ایسا لگتا ہے کہ خدانخواستہ دینی مدارس میں کوئی دہشت گردتیار ہو رہے ہیں، تاہم ملک جن حالات سے گزر رہا ہے یہ سیاستدان ایک این آر او کی مار ہیں جس کیلئے عمران خان تیار نہیں ہیں، وزیر ریلوے نے کہا کہ ختم نبوت کا سپاہی ہوں، جب ختم نبوت کا قانون نواز شریف کے دور مےںلا ےا جا رہا تھا تو اس وقت فضل الرحمن کی پارٹی اس کے حق میں ووٹ دے چکی تھی، میں نے دھمکی دی کہ جمعہ تک اس قانون کو واپس نہ کیا تو دارالعلوم راجہ بازار سے نکلوں گا اور جس کے بعد زلزلہ طاری ہو گیا، انہوں نے کہا کہ ملک میں پہلی دفعہ ریاست مدینہ کی بات عمران خان نے کی، ہمیشہ لوگوں نے لبرل ازم اور جمہوریت کی بات کی، وفاقی وزیر نے کہا کہ نیشنل ایکشن پروگرام اس وقت ایکشن میں ہے اگر کوئی یہ سمجھتا ہے کہ اسلام آباد پر چڑھائی کرکے مسئلے حل ہو جائیں گے تو وہ عقل کا اندھا ہے، انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمن کا عالم یہ ہے کہ وہ گولڈن ٹیمپل تو جاسکتے ہیں لیکن انہیں مزار اقبالؒ یا مزار قائدؒ پر جا کر فاتحہ کرنے کی کبھی توفیق نہیں ہوئی، انہوں نے کہا کہ پہلی دفعہ ملک میں پاک فوج اور حکومت ایک ہی جمہوری گاڑی کے پہیے ہیں جس کو ناکام کرنے کی فضل الرحمن سے کوشش کروائی جارہی ہے‘ شیخ رشید احمد نے کہاکہ سیاست کیلئے وقت اہم ہوتا ہے اور کبھی ایکسپریس ٹرین مسافر کا انتظار نہیں کیا کرتی، اس وقت جو لوگ اور ادارے ملکی سلامتی کیلئے فکر مند ہیں، وہ ملک میں سیاسی انتشار اور خلفشار پر بھی فکر مند ہیں، انہوں نے کہا کہ جب بھی علماءنے تحریک چلائی ملک میں مارشل لاءلگا،  مولانا کو علم ہونا چاہئے کہ پیٹرسن آپ کو اقتدار نہیں دے سکتی، یہاں پنجاب میں صرف گوجرانوالہ، لاہور اور فیصل آباد میں تین ڈویژن حکمرانی کا فیصلہ کرتے ہیں، وفاقی وزیر نے کہا کہ ابھی دھرنا پر دھند چھائی ہوئی لہٰذا سیاستدان عقل و دانش سے کام لیں کیونکہ دنیا کی کوئی طاقت عسکریت پسندی کو قبول کرنے کیلئے تیار نہیں،  مجھے امریکہ نے دوبار ڈی پورٹ صرف اس لئے کیا کہ میرے موبائل میں ایک بزرگ دینی و جہادی شخصیت کا موبائل نمبر موجود تھا، انہوں نے کہا کہ دینی طاقتوں کی آواز ہوں، مولانا فضل الرحمن اقتدار کی خاطر دینی طاقتوں کو خراب نہ کریں، امید ہے کہ 21 اکتوبر سے 26 اکتوبر تک حالات بہتر رخ اختیار کریں گے، بصورت دیگر سب سے زیادہ نقصان نواز شریف اور آصف زرداری کو ہو گا، اس وقت ملک میں بہت پھونک پھونک کر قدم رکھنے کی ضرورت ہے، وزیر ریلوے نے کہا کہ اپوزیشن کہتی ہے کہ ادویات مہنگی ہو گئیں اور ملک میں مہنگائی ہو گئی لیکن انہیں علم ہونا چاہئے کہ مہنگائی کی بڑی وجہ یہ ہے کہ سابق ادوار میں خزانے کو بیدردی سے نوچا گیا اور معیشت کادھڑن تختہ کیا گیا‘ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی معاشی گاڑی اب چل پڑی ہے، پاکستان ریلویز نے 3 مہینے کی ریکارڈ نفع کی شرح پوری کی ہے، پاکستان دنیا میں واحد ملک ہے جہاں مسافر ٹرینوں سے نفع حاصل کیا۔

سورس: وی این ایس، لاہور