بین الاقوامی ادارے پاکستانی معیشت میں بہتری اور استحکام کا عندیہ دے رہے ہیں: شاہ محمو د قریشی

0
48

کوالا لمپور، 5 نومبر (اے پی پی): وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ ہمیں معاشی حوالے سے بہت سے چیلنجز کا سامنا ہے، ملکی معیشت کی بہتری کے لیے بہت سی بنیادی تبدیلیاں اور اصلاحات کی ہیں “معاشی سفارتکاری”کا آغاز بھی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے۔ بین الاقوامی ادارے پاکستانی معیشت میں بہتری اور استحکام کا عندیہ دے رہے ہیں۔

یہ باتیں انہوں نے منگل کو کوالالامپور میں پاکستانی ہائی کمیشن میں معاشی سفارتکاری کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہیں۔ تقریب کا اہتمام کوالالمپور میں پاکستانی ہائی کمشنر آمنہ بلوچ نے کیا تھا۔ تقریب میں ملایشیاء میں مقیم پاکستانی کاروباری حضرات اور پاکستانی کمیونٹی کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔

وزیر خارجہ نے اپنے خطاب میں کہا کہ ہمیں معاشی حوالے سے بہت سے چیلنجز کا سامنا ہے لیکن ہم نے معاشی ڈھانچے کو فعال بنانے کے لیے بہت سی بنیادی تبدیلیاں اور اصلاحات کی ہیں “معاشی سفارتکاری”کا آغاز بھی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمارے ان اقدامات کے ثمرات ہمیں موصول ہونا شروع ہو چکے ہیں ۔اس وقت معاشی ترقی کو جانچنے والے بین الاقوامی ادارے پاکستانی معیشت میں بہتری اور استحکام کا عندیہ دے رہے ہیں ۔ پاکستان کو دو طرح کے طبقات کا سامنا رہا ہے ایک طبقہ وہ جس نے ملک کو لوٹا اور مال و دولت دوسرے ممالک میں چھپائی اور ایک وہ محنت کش طبقہ ہے جو پردیس میں اپنا خون پسینہ بہا کر اپنی محنت کی کمائی زرمبادلہ کی صورت میں پاکستان بھجوا کر ملک کی تعمیر و ترقی میں نمایاں حصہّ ڈال رہا ہے۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ اس وقت اسی ہزار سے زیادہ پاکستانی ملایشیاءمیں مقیم ہیں اور میں آپ کو مبارکباد پیش کرتا ہوں کہ ہماری زر مبادلہ کی شرح کافی حد تک بڑھ چکی ہے۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ میں نے تمام سفراءکو یہ ہدایت جاری کی تھی کہ وہ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کیلئے ہر ممکن سہولت کا اہتمام کریں اور ان کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جائے۔

وزیر خارجہ نے بزنس کمیونٹی کو حکومت پاکستان کی طرف سے ہر ممکن تعاون فراہم کرنے کا یقین دلایا۔وزیر خارجہ نے ملائشیاءمیں تعینات ہائی کمشنر محترمہ آمنہ بلوچ کی کارکردگی کو سراہا۔

وی این ایس، اسلام آباد

Download video