نیب ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس، کئی انکوائریوں اورانویسٹی گیشنز کی منظوری

0
40

اسلام آباد ، 3 دسمبر (اے پی پی): قومی احتساب بیورو کے ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جسٹس جاوید اقبال کی زیرصدارت نیب ہیڈکوارٹر ز اسلام آبادمیں منعقد ہوا۔

اجلاس میں بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کی سابق چیئرپرسن فرزانہ راجہ کے خلاف بدعنوانی کا ریفرنس، قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف، سابق وزیر مملکت برائے داخلہ انجینئر بلیغ الرحمن، سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی، رکن قومی اسمبلی رانا ثناءاللہ، سابق صوبائی وزیر سندھ نثار احمد کھوڑو اور سینیٹر انوار الحق کاکڑ سمیت دیگر کے خلاف انکوائریاں اور انویسٹی گیشنز جبکہ دبئی میں پاکستانیوں کی تقریبا 1.1 ٹریلین روپے کی رقوم ڈیکلئیر کئے بغیر ٹرانسفر کرنے کے الزام کی انکوائری کو قانون کے مطابق مزید کارروائی کے لئے ایف بی آر کو بھیجنے کا فیصلہ کیا گیا۔

اجلاس میں بریگیڈیئر (ر) سکندر جاوید اور دیگر کے خلاف بدعنوانی کا ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی گئی۔ ملزمان پر مبینہ طورپر صاف پانی پروگرام کے غیر قانونی ٹھیکے اور غیرشفاف طور پر دینے کا الزام ہے جس سے قومی خزانے کوبھاری نقصان پہنچا۔

چیئرمین نیب جسٹس جاوید اقبال نے کہا کہ نیب ملک سے بدعنوانی کے خاتمہ اور بدعنوان عناصر سے لوٹی گئی رقوم برآمد کرنے کے ساتھ ساتھ میگا کرپشن کے مقدمات کو منطقی انجام تک پہنچانے کواپنی اولین ترجیح سمجھتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ نیب نے احتساب سب کےلئے کی پالیسی کے تحت گزشتہ25 ماہ میں 73 ارب روپے بلواسطہ اور بلا واسطہ طور پر بدعنوان عناصر سے برآمد کرکے قومی خزانے میں جمع کروائے۔ انہوں نے کہا کہ “نیب کا ایمان۔کرپشن فری پاکستان” ہے۔

 اجلاس میں ڈپٹی چیئرمین نیب، پراسیکیوٹر جنرل اکاﺅنٹیبلٹی نیب، ڈی جی آپریشن نیب اور دیگر سینئر افسران نے شرکت کی۔

وی  این ایس، اسلام آباد

Download Video