اپوزیشن  سیاسی سکورنگ کے بجائے صحت کے شعبے  میں حکومت  کی معاونت کرے: پارلیمانی سیکرٹری برائے صحت

0
70

اسلام آباد، 15جنوری(اے پی پی ): پارلیمانی سیکرٹری برائے صحت ڈاکٹر نوشین حامد نےقومی اسمبلی کو آگاہ کیا  ہے کہ وفاقی حکومت پرائمری، ثانوی اور تیسرے درجے کی نگہداشت کی سہولیات کے نیٹ ورک کے ذریعے مرض کے مفت علاج و معالجہ کی خدمات کے تحت غریبوں  کو تمام امراض کے لئے علاج معالجہ فراہم کرتی ہے۔ اس کے علاوہ حکومت  صحت انصاف کارڈ فراہم کرتی ہے جو ثانوی اور تیسرے درجے کی سطح کے تمام امراض ماسوائے اعضاء کی پیوند کاری کے احاطہ کرتے ہیں۔ اپوزیشن  کو  سیاسی سکورنگ کے بجائے صحت کے شعبہ سے منسلک منصوبوں میں معاونت کرنا چاہئے.

 قومی اسمبلی کا اجلاس  اسپیکر اسد قیصر کی زیر صدارت پارلیمنٹ ہاؤس میں منعقد ہوا۔اجلاس کے آغاز میں میں اسپیکر اسد قیصر  نے دس منٹ میں مختلف وزارتوں کے گیلری میں موجود افسران کی فہرست طلب کرتے ہوئے ہدایت دی کہ جس وزارت کا وقفہ سوالات ہو اس کا کم سے کم جوائنٹ سیکرٹری سطح کا افسر لازمی موجود ہونا چاہئے۔ اسپیکر اسد قیصر نے کہا کہ ریلوے  وزارت مذہبی امور اور  ہیلتھ ڈویژن  کے افسران ایوان میں نہیں آئے ۔ انہوں نے کہا مستقبل میں جو آفیسرز ایوان میں نہیں آئیں گے ان کے خلاف رولنگ دوں گا اور  ان کی اے سی آر کا حصہ بناوں گا۔

وقفہ سوالات کے دوران  ڈاکٹر نوشین حامد نے کہا کہ اپوزیشن  کو  سیاسی سکورنگ کے بجائے صحت کے شعبہ سے منسلک منصوبوں میں معاونت کرنا چاہئے ۔ سندھ میں صحت سے متعلق سہولیات ناکافی ہیں سندھ میں پاگل کتوں کے کاٹنے کی ابتر صورتحال سامنے ہے۔ہیلتھ کارڈ میں مریض کا علاج مفت اور بیڈ فری ملتا ہے,پی ایم ڈی سی کو بند کر کے پی ایم سی لانے کی وجہ ،گزشتہ کونسل معیار پر کام نہیں کر رہی تھی ،میڈیکل میں جو معیار درکار تھا گزشتہ کو نسل تسلی بخش کام نہیں کررہی تھی۔

 قومی  اسمبلی کے  وقفہ سوالات  میں سیکرٹری برائے  صنعت و پیداوار عالیہ حمزہ کامران نے کہا نئے پاکستان میں صرف ترقی ہو رہی ہے۔ ایوان میں موجودہ حکومت کے صنعت و تجارت کے شعبے میں کارکردگی کی تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے پارلیمانی سیکرٹری نے کہا وفاقی حکومت نے آٹو موٹو ڈویلپمنٹ پالیسی 2016-21 متعارف کروائی ہے جس میں 18 نئے انٹر نیٹس کا مائل کیا گیا ہے۔ اور دو بند یونٹس کو بھی بحال کیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ چھ تیار کندگان نے پاکستان میں کاروں کی تیاری کا کام شروع کر دیا ہے جس سے مستقبل میں کارں کی سیلز میں بہتری آئے گی۔ اور تیرہ ہزار دو سو چھپن نئی  نوکریاں بھی مستقبل میں اس شعبے میں دی جائیں گی۔

وی این ایس اسلام آباد

Download Video