بجلی چوری کے خلاف موثر مہم کے تحت 7 ہزار بجلی چوروں کو گرفتار کیا گیا: وزارت توانائی عمر ایوب خان

0
83

اسلام آباد ،13 جنوری (اے پی پی):وزارت توانائی کی جانب سے قومی اسمبلی کو بتایا گیا ہے کہ بجلی چوری کے خلاف موثر مہم کے تحت 7 ہزار بجلی چوروں کو گرفتار کیا گیا ہے جس سے بجلی کی چوری میں واضح کمی آئی ہے‘ پاکستان کے 8882 فیڈرز میں سے 80 فیصد فیڈر لوڈشیڈنگ سے پاک کردیئے گئے ہیں‘ حکومت ملک میں متبادل توانائی کے منصوبوں سمیت بجلی کے انفراسٹرکچر پر توجہ دے رہی ہے جس کی وجہ سے ٹرپنگ کا سلسلہ ختم ہوگیا ہے۔ پیر کو قومی اسمبلی میں وقفہ سوالات کے دوران مسرت رفیق مہیسر کے بجلی کی قیمتوں میں اضافہ سے متعلق سوال کے جواب میں وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب نے کہا کہ جس وقت ہماری حکومت قائم ہوئی اس وقت گردشی قرضوں کا بہاﺅ 39 ارب مہینہ کے حساب سے بڑھ رہا تھا۔ مسلم لیگ (ن) نے آخری دور میں نقصان دینے والے علاقوں میں بجلی کی لوڈشیڈنگ کا خاتمہ کردیا تھا جس کی وجہ سے گردشی قرضوں میں اضافہ ہوا۔ ہم نے 39 ارب کے بہاﺅ کو کم کرکے 10 سے 12 ارب ماہانہ کردیا ہے۔ اس کو رواں سال کے دوران ختم کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے 300 یونٹ تک استعمال کرنے والے صارفین کو متاثر نہیں ہونے دیا۔ مسلم لیگ (ن) نے ہمارے لئے کھڈا کھودا تھا۔ انہوں نے اپنے دور میں بجلی کی قیمتوں میں اضافہ تیل کی قیمتوں میں اضافے کے باوجود نہیں کیا۔ سید جاوید حسنین کے ضمنی سوال کے جواب میں عمر ایوب نے کہا کہ حکومت نے ایک سال میں ریکوریوں کے ذریعے 229 ارب روپے زیادہ کیا۔ اس کے علاوہ چوری کے خلاف مہم چلائی۔ ہم نے 7000 بجلی چوروں کو گرفتار کیا ہے۔ پاکستان کے 8882 فیڈروں میں سے 80 فیصد لوڈشیڈنگ سے پاک کردیئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اللہ کے کرم اور محکمہ کے لوگوں کی ان تھک محنت سے ٹرپنگ کا سلسلہ رک گیا ہے۔ ہم گرڈ سٹیشن تعمیر کر رہے ہیں اور سسٹم پر سرمایہ کاری کر رے ہیں۔ نئے میٹرز لا رہے ہیں۔ سولر سسٹم پر توجہ دے رہے ہیں۔ اس کے علاوہ مجموعی انفراسٹرکچر پر کام ہو رہا ہے۔

وی این ایس اسلام آباد

Download Video