جیل اصلاحات میں مزید تبدیلیاں لائی جا رہی ہیں تاکہ قید کاٹ کر رہا ہونے والے قیدی معاشرے کے ایک اچھے اور مفید فرد بن کر اپنی زندگی گزار سکیں: تاج محمد خان

0
100

پشاور،3فروری(اے پی پی): وزیراعلی خیبرپختونخوا کے معاون خصوصی برائے جیل خانہ جات تاج محمد خان تر ندنے کہا ہے کہ وزیراعظم پاکستان عمران خان اور وزیراعلی خیبرپختونخوا محمود خان کے ویژن کے مطابق خیبرپختونخوا کی جیلوں میں متعارف کرائی گئی اصلاحات کی بدولت صو بے کی جیلوں میں قیدیوں کو تعلیم کے ساتھ ساتھ ٹیکنیکل ایجوکیشن اور کمپیوٹر و دینی تعلیم سے بھی آراستہ کیا جا رہا ہے۔

معاون خصوصی جیل خانہ جات نے   اپنے دورے کے موقع پر ہری پور جیل کے قیدیوں کے لیے قید کی سزا میں دو ماہ تخفیف کا اعلان کیا جس کی بدولت 163 قیدیوں کو فائدہ حاصل ہوگا۔یہ اعلان انہوں نے پیر کے روز سنٹرل جیل ہری پور کے دورہ کے موقع پر بات چیت کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر ممبر خیبر پختونخواہ اسمبلی و چیئرمین ضلعی ترقیاتی مشاورتی کمیٹی ضلع ہر ی پور ارشد ایوب خان، رکن صوبائی اسمبلی بابرسلیم سواتی، آئی جی جیل خانہ جات خیبرپختونخوا مسعود خان،جیل سپرنٹنڈنٹ ہری پور مقصو د الرحمان خٹک،اسسٹنٹ کمشنر ہریپور محمد احسان احسن کے علاوہ دیگر بھی ان کے ہمراہ تھے۔معاون خصوصی جیل خانہ جات تاج محمد خان ترند نے جیل حکا م کو ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ جیل کے اندر صحت مند سرگرمیوں کو زیادہ سے زیادہ فروغ دیا جائے اور خاص کر قیدی بچوں اور خوا تین کے ساتھ اچھا سلوک برتا جائے۔

انہوں نے کہا کہ جیل کے اندر انڈسٹری بھی قائم کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔تاج محمد خا ن تر ند نے جیل ہسپتال،سکو ل،لنگر خانہ، خوا تین بلا ک، لائبریری  جیل میں نئے بھر تی ہو نے وا لے اسٹاف کے لیے قائم کی گئی نو تعمیر شدہ اکیڈمی کا معا ئنہ بھی کیا۔ وہ دورہ کے دوران قیدیو ں سے ملے اور ان کے مسائل معلوم کئے۔ جبکہ کہ بعض قیدیوں نے انہیں اپنی درخواستیں پیش کیں۔ اس موقع پر انہوں نے آئی جی جیل خانہ جات او ر سپرنٹنڈنٹ سینٹرل جیل ہری پورکوہدایت کی کہ جیل کے اندر قیدیوں اورخاص کر مریضوں کو ہر ممکن سہولت دی جائے اور کھا نا مینیو اور وزن کے مطابق مہیا کیا جائے۔  اس موقع پرجیل سپرنٹنڈنٹ نے بریفینگ دیتے  ہوئے بتایا کہ گزشتہ سال20کروڑ 50لاکھ روپے کا بجٹ جیل کے لئے مختص کیا گیا تھا جس میں سے ایک قیدی پرروزانہ 387 روپے خرچ حکو مت برداشت کر رہی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ 2001  سے آج تک جیل میں 2338قیدیو ں کو میٹرک،ایف اے، بی اے، ایم اے اور دیگر علوم پڑھائے گئے۔ 2017 سے آج تک1115قیدیو ں کو چھ ماہ کے شارٹ ٹیکنیکل کورسز کرائے گئے۔ اس کے ساتھ ساتھ دو کمپیوٹر سینٹر بھی قائم کئے گئے ہیں جن میں قیدیوں کو کمپو ٹر کی تعلیم دی جا تی ہے اور قیدیوں کو جیل کے اندر کھیل کود کی سر گر میو ں کی اجازت بھی دی جاتی ہے۔ معاون خصوصی جیل خا ن جات تا ج محمد ترند نے کہا کہ حکومت کی بھرپور کوشش ہے کہ خیبرپختونخوا کی تمام جیلوں میں قیدیوں کو تعلیم اور تربیت  دی جائے۔انہوں نے کہا کہ ضلعی محکمہ سپو رٹس سے کھیلوں کا سامان لے کر قیدیوں کو مہیا کیا جائے۔ انہوں نے تمام  جیلو ں میں لا ئبریری کے لیے کتابیں بھی مہیا کرنے کا اعلان کیا۔ انہوں نے کہا کہ انشائاللہ یہ کام جلد مکمل کرلئے جائیں گے۔۔انہوں نے کہا کہ1929میں سنٹرل جیل ہری پور کی بلڈنگ تعمیر کی گئی اتنی اچھی حا لت اور صاف جیل پورے صوبے میں نہیں ہے اور اس کی عمارت کو اپنی اصلی حالت میں برقرار رکھا گیا جس پر جیل حکا م اور عملہ خراج تحسین کا مستحق ہے

وی این ایس    پشاور

Download Video