سپیکر خیبر پختونخوا اسمبلی  مشتاق غنی نے بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی کے مجرموں کو سرعام پھانسی دینے کی تجویز دیدی

0
1106

پشاور، 4فروری(اے پی پی): خیبر پختونخوا میں بڑھتی بچوں سے جنسی زیادتی، اغوا، سمگلنگ اور قتل کے واقعات کی روک تھام کیلئے صوبائی حکومت کی نئی موثر قانون سازی پر کام تیز کردیا گیا ہے۔ اس سلسلے میں خیبر پختونخوا اسمبلی کی خصوصی کمیٹی کا اجلاس آج منعقد ہوا ۔ سپیکر خیبر پختونخوا اسمبلی مشتاق غنی کمیٹی کے سربراہ ہیں

اجلاس میں وزیرقانون سلطان محمد، وزیر اطلاعات شوکت یوسفزئی، وزیر سماجی بہبود ہشام انعام اللہ اور دیگر حکومتی نمائندوں کیساتھ اپوزیشن جماعتوں کے ارکان اور محکمہ قانون کے حکام اور ایڈوکیٹ جنرل خیںر پختونخوا شمائل بٹ ایڈوکیٹ بھی شریک ہوئے۔

کمیٹی چیئرمین مشتاق غنی نے بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی کے مجرموں کو سرعام پھانسی دینے کی تجویز دیدی لیکن  سرعام پھانسی کی سزا کی تجویز پر اجلاس میں اختلاف رائے پایا گیا۔

خصوصی کمیٹی کے اجلاس میں افسوسناک واقعات پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے بچوں کے ساتھ زیادتی کے مجرموں کی قید کی سزائیں اور جرمانے بڑھانے کی تجاویز پیش کی گئیں۔ بعض تجاویز تعزیراتِ پاکستان کا حصہ بنانے کیلئے وفاقی حکومت کو بھیجنے کا فیصلہ کیا گیا جبکہ نئی قانون سازی کیلئے اسلامی نظریاتی کونسل سے مشاورت کا فیصلہ ہوا۔

اجلاس میں چائلڈ پورنو گرافی میں ملوث مجرموں کے لئے بھی سخت سزائیں تجویز کی گئیں جن کی منظوری کابینہ اور اسمبلی سے لی جائیگی۔

وی این ایس پشارو

Download Video