وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کی بیجنگ میں میڈیا سے گفتگو

0
83

بیجنگ، 16 مارچ ( اےپی پی): وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے بیجنگ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمارا دورہ ء چین کا بنیادی مقصد، چینی قیادت اور عوام کے ساتھ اظہار یکجہتی کرنا ہے۔ چین نے جس طرح عزم و ہمت کے ساتھ کرونا وائرس کا ڈٹ کر مقابلہ کیا پوری دنیا ان کی کاوشوں کو سراہا رہی ہے۔ پہلے پہل، لوگ چین کے کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے خلاف اٹھائے گئے اقدامات پر تحفظات کا اظہار کر رہے تھے لیکن آج پوری دنیا ان کے اقدامات کی پیروی کرتی دکھائی دے رہی ہے ۔

 انہوں نے کہا کہ چین پاکستان کا دیرینہ دوست ہے- چینی صدر شی کی، صدر پاکستان کو دورہ کی دعوت بھی تھی لیکن ہماری اپنی خواہش بھی تھی کہ یہاں آیا جائے اور چینی بھائیوں کے عزم و ہمت کی داد دی جائے۔اس دورے سے ہمیں چینی قیادت کے ساتھ دو طرفہ تعلقات، علاقائی صورتحال، افغان عمل امن اور کشمیر کی صورتحال سمیت متعدد امور پر تبادلہ خیال کا موقع بھی میسر آئے گا۔

وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ یہاں ہماری چین کے صدر، وزیر اعظم اور دیگر قیادت کے ساتھ ملاقاتیں بھی ہونگی اور زراعت اور سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے شعبوں میں تعاون کے حوالے سے مفاہمتی یادداشتوں پر دستخط بھی ہونگے۔ہمیں چینی قیادت کا خصوصی شکریہ بھی ادا کرنا ہے کہ انہوں نے جس طرح پاکستانی طلباء کا خیال رکھا اور ان کو ہر طرح کی معاونت فراہم کی وہ قابل تحسین ہے۔چین جب اس کڑے وقت سے گزر رہا تھا تو بہت سے ممالک نے چین سے انخلا کو ترجیح دی لیکن وزیر اعظم پاکستان نے نہ. صرف چینی قیادت کو ٹیلی فون کر کے اظہار یکجہتی کیا بلکہ انہیں اس مشکل وقت میں میں پاکستان کی طرف سے ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی بھی کروائی۔

چین میں پاکستانی طلباء کے حوالے سے والدین میں خاصی بے چینی اور تشویش پائی جاتی تھی میں نے اپنے چینی ہم منصب سے بات کی اور انہیں اس تشویش سے آگاہ کیا تو انہوں نے یقین دلایا کہ پاکستانی طلباء ان کے اپنے طلباء ہیں اور وہ ان کا ہر طرح سے خیال رکھیں گے میں شکر گزار ہوں چینی قیادت کا کہ انہوں نے اپنے قول کی پاسداری کی۔

 انہوں  نے مزید کہا کہ پاک چین راہداری منصوبوں کی تکمیل کے لئے دونوں ممالک کی قیادت پر عزم ہے عارضی طور پر، مختصر وقت کیلئے اس میں وقفہ ضرور آیا ہے لیکن انشاءاللہ یہ منصوبے جلد مکمل ہوں گے اس سلسلے میں دونوں ممالک پر عزم ہیں اور کوئی ابہام نہیں ہے ۔افغانستان امن عمل کے حوالے سے پاکستان کا شروع سے موقف یہی رہا ہے کہ اس مسئلے کا کوئی عسکری حل نہیں ہے۔

وی این ا یس، بیجنگ

Download Video