وزیر اعظم عمران خان کے زیرِصدارت پاکستان آئی لینڈ ڈویلپمنٹ اتھارٹی اور راوی اربن ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے ورکنگ گروپس کا اجلاس

0
191

اسلام آباد ،20 نومبر (اے پی پی ):وزیر اعظم عمران خان کے زیرِصدارت پاکستان آئی لینڈ ڈویلپمنٹ اتھارٹی اور راوی اربن ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے ورکنگ گروپس کا اجلاس ہوا۔اجلاس میں گورنر سندھ عمران اسماعیل اور چیف سیکرٹری پنجاب جواد رفیق ملک  نے ویڈیو لنک کے ذریعے شرکت کی ۔ وزیر اعظم کو دونوں منصوبوں پر ہونے والی اب تک کی پیش رفت سے آگاہ کیا گیا ۔وزیر اعظم کو بتایا گیا کہ راوی سٹی اور جزائر پر بسائے جانے والے شہر ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ سرسبز شہر (گرین سٹی) کے اصولوں کے عین مطابق بنائے جائینگے۔

چیئرمین راوی ڈیولپمنٹ اتھارٹی نے بتایا کہ تعمیرات کیلئے 18600 ایکڑ اراضی کا سروے مکمل ہو چکا ہے جس میں  مقامی آبادی کو  بے دخل کرنے یا کہیں اورمنتقل کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔   انہوں نے مزید بتایا کہ راوی سٹی منصوبہ بین الاقوامی معیار کی رہائش کے ساتھ ساتھ نکاسی آب، زیرِ زمین پانی کے ذخائر کی دستیابی و حفاظت اور ماحولیاتی تحفظ کے حوالے سے خطے میں قابلِ تقلید نمونہ ثابت ہوگا۔

منصوبے قرض کی بجائے شراکت داری کی بنیاد پر بنائے جا رہے ہیں جس میں سرمایہ کاری کیلئے بین الاقوامی ادارے و سرمایہ کار دلچسپی کا اظہار کر رہے ہیں۔چیئرمین پاکستان آئی لینڈ ڈویلپمنٹ اتھارٹی نے وزیرِ اعظم کو آئی لینڈ ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے ماسٹر پلاننگ اور ماحولیاتی مطالعہ کے ضمن بین الاقوامی کمپنیوں کی بڑی تعداد میں دلچسپی کے حوالے سے آگاہ کیا.۔

وزیرِ اعظم نے کہا کہ پاکستان کی سمندری پٹی سیاحت اور بین الاقوامی معیار کی شہری تعمیرات کیلئے نہ صرف موزوں ہے بلکہ بیرونی سرمایہ کاری کے ان گنت مواقع پیدا کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے. انہوں نے مزید کہا کہ راوی سٹی منصوبہ لاہور جیسے بڑے شہر پر آبادی کے دباؤ کو کم کرنے کے ساتھ ساتھ پاکستان میں اربن پلاننگ کی نئی جہتیں متعارف کرائے گا۔

وزیر اعظم نے کہا کہ ان بڑے منصوبوں سے ملکی معیشت اور عام آدمی کی زندگی پر مثبت اثرات مرتب ہونگے. انہوں نے کہا کہ یہ منصوبے مقامی صنعتوں کی ترقی کا باعث بننے کے ساتھ ساتھ روزگار کے نئے مواقع بھی پیدا کرنے  کا باعث بنیں گے۔