بوسنیا کے سفیر کی معاون خصوصی خیبرپختونخوا کامران بنگش سے ملاقات، بوسنیا اور پاکستان چھوٹے اور بڑے بھائی کے مانند ہے : سفیر کا اظہار خیال 

70

پشاور، 5مارچ(اے پی پی): وزیراعلی کے معاون خصوصی برائے اطلاعات و اعلی تعلیم کامران بنگش سے پاکستان میں تعینات بوسنیا کے سفیر ثاقب فورک نے ملاقات کی ہے۔ ملاقات کے دوران بوسنیا سے نامزد پختونخوا کے اعزازی سیکرٹری اسد سلیم بھی موجود تھے۔ معاون خصوصی نے سفیر کا پُرتپاک اسقبال کیا اور انہیں پھول بھی پیش کئے۔

ملاقات کے دوران بوسنیا کے سفیر کا کہنا تھا کہ پاکستان اور بوسنیا دونوں بڑے اور چھوٹے بھائی کے مانند ہے۔ پاکستان نے بوسنیا میں خانہ جنگی کے خاتمے میں اہم کردار ادا کیا۔ ہم چاہتے ہیں کہ ہم پاکستان اور بالخصوص صوبہ خیبرپختونخوا سے اچھے تعلقات استوار کریں اور ہمارے درمیان معاہدے طے پائے اور دونوں ممالک کے دو طرفہ تعلقات میں مزید بہتری آئے۔ پاکستان اور بوسنیا کے درمیان تین سے چار ملین ڈالرز کی تجارت ہوتی ہے۔ دونوں ممالک کے درمیان تجارتی حجم بڑھانے پر بھی اتفاق ہوا۔

ثاقب فورک نے اعلی تعلیم میں پختونخوا حکومت کیساتھ تعاون بارے کہنا تھا کہ بوسنیا میں بھی بین لاقوامی معیار کی جامعات ہیں جہاں پاکستانی طلبا پڑھ سکتے ہیں۔ بوسنیا کے جامعات کے اخراجات دیگر بین الاقوامی ممالک سے پانچ گُنا کم ہے۔

معاون خصوصی نے بوسنیا کے سفیر کو بتایا کہ دونوں ممالک کے درمیان جوائنٹ ڈگری پروگرام پر اکتفا ہوسکتا ہے۔ صوبے کے جامعات کو بین الاقوامی معیار اور مارکیٹ سے جوڑنا وقت کی اشد ضرورت ہے۔ بین الاقوامی معیار کے تعلیم کی ترویج میں بوسنیا پاکستان کا اتحادی بننے کا خواہاں ہے۔ صوبہ خیبرپختونخوا میں سیاحت کے بڑے مواقع ہیں، بین الاقوامی سیاح یہاں آکر یہاں کی قدرتی خوبصورتی سے مستفید ہوسکتے ہیں۔ ہم اعلی تعلیم کو بین الاقوامی سطح پر لے جارہے ہیں جس کے بے شک دوست ممالک کی تعاون درکار ہوگی ۔

سفیر نے مزید بتایا کہ پاکستانی مصنوعات دیگر یورپی ممالک کی نسبت سستی اور معیاری ہیں۔پاکستان میں مخفی تجارت کے مواقع بے سیار ہیں۔ جس میں مزید تعاون کیساتھ تجارتی حجم کو تقویت مل سکتی ہے۔ بوسنیا آپ کا منتظر ہے اور ہماری جانب سے پاکستانی قیادت اور عوام کو کھُلی دعوت ہے ۔ ملاقات کے اختتام پر معاون خصوصی نے سفیر کا شکریہ ادا کیا اور انہیں اعزازی شیلڈ پیش کئے۔  حجم کو تقویت مل سکتی ہے۔ بوسنیا آپ کا منتظر ہے اور ہماری جانب سے پاکستانی قیادت اور عوام کو کھُلی دعوت ہے ۔

ملاقات کے اختتام پر معاون خصوصی نے سفیر کا شکریہ ادا کیا اور انہیں اعزازی شیلڈ پیش کئے۔