کشمیر کا مقدمہ جس انداز میں موجودہ حکومت نے عالمی فورمز پر اجاگر کیا اسکی مثال نہیں ملتی: ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان

0
75

اسلام آباد ، 6 نومبر (اے پی پی): وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ پاکستان کا وجود کشمیر کے بغیر ادھورا ہے، کشمیر کا مقدمہ جس انداز میں موجودہ حکومت نے عالمی فورمز پر اجاگر کیا ہے شاید 72 سالہ ملکی تاریخ میں ایسی مثال نہیں ملتی ۔

وہ بدھ کو یہاں یوم شہداءجموں کی تقریب سے خطاب کر رہیں تھیں۔ وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ پاکستان و آزاد کشمیر کے عوام مقبوضہ کشمیر کی عوام کے ساتھ ہیں،ہم کشمیری بہن بھائیوں کے دکھ درد کو محسوس کرتے ہیں، آج یوم شہداءجموں کو ان کی قربانیوں سے یہ تحریک آزادی زندہ ہے۔

ڈاکٹر فردوس  نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سمیت ہر عالمی فورم پر نہ صرف کشمیر کا مقدمہ لڑا ہے بلکہ دنیا کے سامنے ہندوستان کے مکروہ چہرے کو بے نقاب کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج حکومت، پاک فوج اور پوری قوم کشمیریوں کی تحریک آزادی کے ساتھ ہیں، آج پہلی مرتبہ عالمی میڈیا نے کشمیریوں پر ہندوستانی مظالم کو اجاگر کیا۔

وزیراعظم کی معاون خصوصی ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ افسوس ہے کہ عالمی برادری اور عالمی طاقتین کشمیریوں کو ان کے حقوق دلانے میں ناکام ہیں، ہم نے اپنی موثر سفارتکاری و میڈیا کے زریعے باربار عالمی ضمیر کو جنجھوڑنا ہے۔انہوں نے کہا کہ سوشل میڈیا کا استعمال زیادہ کریں اور کشمیریوں کی مدد کریں ، آپ سب برہان الدین وانی بن کر بھارت کا مکروہ چہرہ دنیا کے سامنے لائیں ۔

انہوں نے کہا کہ دنیا کا کوئی بھی فورم بھارت کے اس مکروہ اقدام کو پسند نہیں کر رہا اس کو مزید بے نقاب کرنے کے لئے ایک عالمی سطح پر مناسب حکمت عملی کی ضرورت ہے، پاکستان اور پاکستان حکومت کشمیریوں کی حمایت اسی جوش و خروش سے جاری رکھے گی ۔انہوں نے کہا کہ حریت رہنماوں کی قربانیاں رنگ لانے والی ہیں ،ظلم کی سیاہ رات ختم ہونے والی ہے ۔انہوں نے کہا کہ دنیا جان چکی ہے کہ برہان الدین وانی وہ نوجوان تھا جس کا صرف یہ جرم تھا کہ وہ سوشل میڈیا کے زریعے بھارتی ظلم اور بربریت کو اجاگر کرتا تھا۔

سورس: وی این ایس، اسلام آباد