تحریک کشمیر برطانیہ کیجانب سے کشمیر پر “عالمی ٹیلی کشمیر کانفرنس” کا انعقاد ، دنیا کو کشمیر میں جاری بھارتی مظالم سے آگاہ کیا

0
124

لندن،23اپریل(اے پی پی ):کرونا وائرس کے باعث سماجی فاصلوں اور دنیا کے محدود ہوجانے کے باوجود تحریک کشمیر برطانیہ نے کشمیر پر عالمی ٹیلی کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرکے دنیا کو کشمیر میں بھارتی مظالم سے آگاہ کیا ،  تحریک کشمیر برطانیہ کے زیر  اہتمام عالمی کشمیر ٹیلی کانفرنس میں عالمی برادری کو کرونا کی خوف کی فضا میں کشمیر اور کشمیریوں کو یاد رکھنے کا وعدہ لیا گیا ،ٹیلی کانفرنس میں صدر آزاد حکومت ریاست جموں و کشمیر سردار مسعود خان نے  بطور مہمان خصوصی شرکت کی ، کانفرنس کی صدارت صدر تحریک کشمیر برطانیہ راجہ فہیم کیانی نے کی،جس میں حریت پسند راہنما الطاف احمد بٹ ،برطانیہ پارلیمنٹ کے ایم پی شیڈو منسٹر افضل خان، لارڈ نذیر احمد،لارڈ قربان حسین، یوتھ فار کشمیر کی رہنماء محترمہ شائستہ صفی اور  سابق کونسلر شکیل خان ڈپٹی سیکریٹری جنرل تحریک کشمیر  برطانیہ نے بھی اپنے خیالات کا اظیار کیا۔

صدر ریاست آزاد جموں و کشمیر سردار مسعود نےکہاکہ  کرونا وائرس کے دوران مقبوضہ کشمیر کے لوگ ڈبل لاک ڈاون میں ہیں اور بھارتی فوجی کا قبضہ اور ظلم کرونا وائرس سے بھی خطرناک ہے ، بھارتی افواج معصوم کشمیریوں کو جعلی مقابلوں کی آڑ میں شہید کر رہی ہے کشمیریوں کی نسل کشی کا دنیا کو نوٹس لینا چاہیے ۔انہوں نے کہا کہ  کروناوائرس کی صورتحال میں اقوام متحدہ نے قیدیوں کی سیفٹی کے لیے جو احکامات  جاری کیے ہوے ہیں اس کابھارت بالکل نوٹس نہیں لے رہا ۔ بھارت کالے قوانین کو استعمال کرکے کشمیری صحافیوں کی آواز بند کرنے کے لیے جعلی کیسز بنا رہاہے جبکہ بھارت، ڈومیسائل قانون  میں تبدیلی کرکے مسلم اکثریتی ریجن  بھارتی جموں و کشمیر کو اقلیتی مسلم ریاست میں تبدیل کرنے کی کوشش کر رہا جو بین الاقوامی قوانین کے تحت جرم ہے۔

راجہ فہیم کیانی نے اس موقع پہ کہا کہ برٹش پارلیمنٹیرنز نے   مقبوضہ کشمیر میں اس ڈبل لاک  کے  دوران انسانی حقوق کی خلاف وارزیوں پر تشویش کا اظہار کیاہے اور کہا ہےکہ ہم اس ظلم کے خلاف برطانوی  پارلیمنٹ میں آواز اٹھائیں گے اور  اقوام متحدہ کی اخلاقی اور قانونی ذمہ داری ہے کہ وہ اپنی قراردادوں پر عمل درآمد کروائے ۔ انہوں نے مزید کہا 5 اگست کے بعد کشمیر کے ایشو  کے ساتھ برطانوی ہارلیمنٹ میں  بڑی تعداد میں ایم پیز نے بھارت کے جبرااقدامات کی مذمت کی۔

کشمیری حریت پسند راہنما الطاف احمد بٹ نے کہا کہ اس نفسا نفسی اور خوف کے عالم میں تحریک کشمیر برطانیہ نے کشمیر پہ ٹیلی کانفرنس کے ذریعے عالمی ضمیر کو جس طرح سے جھنجوڑا ہے اسکی مثال نہیں ملتی ،  بھارت میں  فاشسٹ مودی کی حکومت ہے جو ایک  حکمت عملی سے کشمیری بہادر عوام پر خوف طاری کرنے کی کوشش کررہا ہے مگر بھارتی فاشسٹ فوجیوں اور انکے فاشسٹ حکمرانوں بالخصوص فاشسٹ وزیر اعظم ہٹلر نماء مودی نہیں جانتا کہ کشمیری کسی جبر اور خوف کو نہیں مانتے ، کرونا وائرس کی وجہ سے دُنیا کو احساس ھوگیا کہ لاک ڈاون کیا ھوتا ہے۔

لارڈ نذیر نے اس موقع پر کہاکہ برطانیہ اور یورپ کے کشمیری اپنے مادر وطن پر ہونے والے مظالم کی آواز ہر فورم پہ اٹھا رہے ہیں، یہ مقبوضہ کشمیر کے باسیوں کی قربانی اورتارکین وطن کی کوششوں کانتیجہ ہے کہ کشمیر آج پھر دنیا کے ٹاپ ایجنڈے پہ ہے ۔انہوں نے کہاکہ دنیا کو پتہ لگ گیا ہے لاک ڈاون کا درد کیا ہوتاہے،دنیا اب کشمیریوں کے دکھ درد اور کیفیت کو سمجھ سکتی ہے۔

اے پی پی /حمزہ/ھامد