وزیر خارجہ  شاہ محمود قریشی کی روسی وزیر خارجہ سرگئی لاوروف سے ملاقات

0
140

ماسکو، 10ستمبر ( اے پی پی): ماسکو میں جاری شنگھائی تعاون تنظیم کی وزرائے خارجہ کونسل کے اجلاس کے موقع پر وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نےروسی وزیر خارجہ سرگئی لاوروف سے ملاقات کی۔دوران ملاقات دو طرفہ تعلقات، کرونا وبائی صورتحال ،اہم علاقائی و عالمی امور سمیت باہمی دلچسپی کے معاملات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

اس موقع پر وزیر خارجہ  شاہ محمود قریشی  نے پ کہا کہ پاکستان، روس کے ساتھ اپنے دو طرفہ تعلقات کو انتہائی اہمیت دیتا ہے ۔پاکستان روس کے ساتھ دو طرفہ تعلقات کو مزید مضبوط اور مستحکم بنانے کیلئے کثیر الجہتی شعبہ جات میں دو طرفہ تعاون کے فروغ کا متمنی ہے۔وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان شروع سے افغانستان میں بدامنی کے خاتمے اور دیرپا امن کے حصول کیلئے افغان قیادت میں، افغانوں کو قبول مفاہمتی عمل پر مبنی مذاکرات کا حامی رہا ہے۔ خطے میں دیرپا قیام امن کو یقینی بنانے کیلئے، بین الافغان مذاکرات کا جلد انعقاد ناگزیر ہے ۔ بھارت نے بین الاقوامی قوانین اور اقوام متحدہ کی قراردادوں کو پس پشت ڈالتے ہوئے مقبوضہ کشمیر میں آبادیاتی تناسب کو بدلنے کی مذموم کوشش کی ہے۔

دونوں وزرائے خارجہ نے افغانستان میں قیام امن کے حوالے سے کی جانے والی کاوشوں کا جائزہ لیا اور اس سلسلے میں اب تک ہونیوالی پیش رفت پر اطمینان کا اظہار کیا ۔وزیر خارجہ نے اپنے روسی ہم منصب کو مقبوضہ جموں و کشمیر میں جاری بھارتی مظالم اور انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں سے آگاہ کیا

دونوں وزرائے خارجہ نے دو طرفہ تعلقات کے فروغ اور باہمی دلچسپی کے مختلف شعبوں میں دو طرفہ تعاون بڑھانے کیلئے مشاورت جاری رکھنے پر اتفاق کیا۔