وفاقی کابینہ نے الیکشن کمیشن کو الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں کے استعمال اور اووسیز پاکستانیوں کو ووٹ کا حق دینے  کی سہولت کے لئے اختیارات دینے سے متعلق 2آرڈیننس کی منظوری   دیدی

15

اسلام آباد۔4مئی  (اے پی پی):وفاقی کابینہ نے الیکشن کمیشن کو الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں (ای وی ایم) کے استعمال اور اووسیز پاکستانیوں کو ووٹ کا حق دینے  کی سہولت کے لئے اختیارات دینے سے متعلق 2آرڈیننس، سندھ  حکومت کی درخواست پر سندھ میں ایس او پیز پر عمل درآمد کے لئے فوج تعینات کرنے ،عید الفطر پر قیدیوں کی سزائوں میں 90دن معافی  کی منظوری دیدی ہے،سرکاری ملازمین نوکری سے استعفیٰ دئیے بغیر ایم پی ون اور ایم پی ٹو سکیل  کے حصول ،آئی پی پیز کو بقایا جات کی مد میں 40فیصد ادا کرنے اور پاک سعودی تعلقات کو مستحکم بنانے کیلئے سپریم کورآرڈینشن کمیٹی کو فعال کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ منگل کو وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین نے وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد میڈیا کو اجلاس کی کارروائی سے متعلق بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ  وزیراعظم عمران خان نے اجلاس کے آغاز میں ہدایت دی کہ بوڑھے ماں باپ کے تحفظ کے حوالے سے قانون سازی کے عمل کو تیز کیاجائے ۔ وزیراعظم کو الیکٹرانک ووٹنگ مشین اور بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو حق رائے کا اختیار دینے کے حوالے سے پیش رفت پر بریفنگ دی گئی۔ وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی نے بتایا کہ عید کے آخر تک مقامی طور پر تیار کی جانے والی الیکٹرانک ووٹنگ مشین کا ماڈل(پروٹوٹائپ مکمل طور پر تیار کر لیا جائے گا ۔مشیر برائے پارلیمانی امور نے بتایا کہ الیکٹرانک ووٹنگ کے حوالے سے بڑی پیش رفت میں الیکشن کمیشن ووٹنگ کے عمل کو الیکٹرانک ووٹنگ مشین سے کرانے پر تیار ہے اور اس حوالے سے قانون سازی کی جارہی ہے ۔انصاف کی فراہمی کے سول پروسیجر کوڈ میں اصلاحات کے حوالے سے وزیراعظم نے صوبہ خیبر پختونخواہ اور وفاقی دارالحکومت میں ہونے والی پیش رفت کو سراہتے ہوئے حکومت پنجاب کو ہدایت کی کہ اس حوالے سے کوششیں تیز کی جائیں تا کہ سہل اور بروقت انصاف کی فراہمی یقینی ہوسکے ۔معاون خصوصی برائے صحت نے کابینہ کو کورونا کی صورتحال پر بریفنگ دی ۔ کابینہ کو بتایا گیا کہ صوبہ پنجاب ‘کے پی کے میں کوروناکے پھیلاؤ میں ٹھہراؤ کا رجحان دیکھا گیا ہے جو کہ کسی حد تک تسلی بخش ہے تا ہم اس حوالے سے ایس او پیز پر مکمل عمل درآمد اور این پی آئیز پر سختی سے عمل کرنے کی ضرورت ہے ۔اجلاس کو بتایا گیا کہ اس وقت وفاقی دارالحکومت میں این پی آئی پرعمل درآمد کی شرح 88فیصد ہے جبکہ سندھ میں یہ شرح 45فیصد تک ریکارڈ کی گئی ہے ٭ پاکستان ریلویز کے آپریشنز میں نجی شعبہ کی شمولیت کو یقینی بنانے اور اس حوالہ سے نجی شعبہ کی بھرپور شمولیت کی حائل میں ایک بڑی رکاوٹ کو دور کرنے کے حوالہ سے وفاقی کابینہ نے اہم فیصلہ لیتے ہوئے نجی شعبہ کی جانب سے دی جانے والی بولیوں (بڈز) پر 10 فیصد ایڈوانس ود ہولڈنگ ٹیکس کے خاتمہ کی منظوری دی۔وفاقی کابینہ نے سیّد نجم سعید کو ریلوے کنسٹرکشن پاکستان لمیٹڈ کا چیف ایگزیکٹو آفیسر تعینات کرنے کی منظوری دی ہے۔اجلاس میں کابینہ کمیٹی برائے ادارہ جاتی اصلاحات کے 8 اپریل 2021ء اور 15 اپریل 2021ء کے اجلاسوں میں لئے گئے فیصلوں کی توثیق کی گئی۔ ان فیصلوں میں ایک اہم فیصلہ بین الوزارتی معاملات خصوصاً کارسرکار کو مقررہ مدت میں سرانجام دینے اور اس حوالہ سے ٹائم لائن کی تعیناتی ہے۔کابینہ نے اقتصادی رابطہ کمیٹی کے 28 اپریل 2021ء کے اجلاس میں لئے گئے فیصلوں کی منظوری دی۔ ان فیصلوں میں مختلف وزارتوں کی تکنیکی اضافی گرانٹس کی درخواستوں پر فیصلے اور آئی پی پیز کو نئے انتظامات کے تحت ادائیگیوں کی پہلی قسط کی ادائیگی کی منظوری شامل تھی۔