وزیرِ اعظم عمران خان کی زیر صدارت سمگلنگ کی روک تھام کے سلسلے میں اعلیٰ سطحی اجلاس

0
34

اسلام آباد،01جولائی (اے پی پی ):وزیرِ اعظم عمران خان کی زیر صدارت سمگلنگ کی روک تھام کے سلسلے میں اعلیٰ سطحی اجلاس ہوا۔اجلاس میں سمگلنگ کی وجہ سے ملکی معیشت کو درپیش مسائل اور اسکے نتیجے میں ملکی صنعت کو پہنچنے والے نقصانات پر کامرس، وزارتِ داخلہ اور ایف بی آر کی جانب سے تفصیلی بریفنگ دی گئی۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیرِ اعظم عمران خان نے کہا کہ سمگلنگ کے ناسور نے ملکی معیشت کوبھاری نقصان پہنچایا ہے۔ صنعتی عمل کو فروغ دینے کی حکومتی کوششوں کو بارآور بنانے کے لئے ضروری ہے کہ سمگلنگ کے ناسور پر موثر طریقے سے قابو پایا جائے۔

وزیرِ اعظم نے کہا کہ ملک کوقرضوں کی دلدل سے نکالنے کے لئے ضروری ہے کہ جہاں  ایک طرف زراعت کو ترقی دی جائے وہاں  دوسری طرف صنعتی شعبے کو بھی فروغ دیا جائے جس کے لئے ضروری ہے کہ سمگل شدہ اشیا کی درآمد اور خرید و فرخت کی یکسر روک تھام کی جائے۔

انہوں نے کہا کہ ماضی میں جہاں ایک طرف روزمرہ استعمال کی اشیاء کی سمگلنگ کی روک تھام سے پہلو تہی کی گئی وہاں ملک سے غیر قانونی طور پر زرمبادلہ کی سمگلنگ کو بھی اعلیٰ شخصیات کی سر پرستی حاصل رہی جس کے نتیجے میں ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر میں مسلسل کمی واقع ہوئی۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے صنعت کی بحالی و ترقی کے لئے مفصل اقدامات کیے ہیں اور سمگلنگ کی روک تھا م انہی اقدامات کا اہم حصہ ہے۔

 اجلاس میں پاک افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کو منظم کرنے کے لئے کیے جانے والے اقدامات، پاک ایران بارڈر کے ذریعے تیل و ڈیزل کی سمگلنگ  کی حوصلہ شکنی،مغربی سرحدوں پربسنے والے افراد کی تجارتی سرگرمیوں و دیگر اہم معاملات پر بھی تفصیلی بریفنگ دی گئی۔

اجلاس میں وزیرِ داخلہ کی سر براہی میں اعلیٰ سطحی کمیٹی کے قیام کے فیصلہ کیا گیا ۔ کمیٹی وزارت داخلہ، کامرس ڈویژن، ایف بی آر، فنانس ڈویژن،صوبائی حکومتوں کے نمائندوں اوردیگر متعلقین پر مشتمل ہوگی۔کمیٹی سمگلنگ کے حوالے سے تمام پہلوؤں کا جائزہ لیکراسکی موثر روک تھام خصوصا سرحدوں کی موثر نگرانی، پاک افغان ٹرانزٹ ٹریڈکے غلط استعمال کی روک تھام،موجودہ قوانین میں ضروری ترامیم اور دیگرمتعلقہ معاملات کا تفصیلی جائزہ لے کر ایک ماہ میں اپنی سفارشات پیش کرے گی۔

اجلاس میں وزیرِ داخلہ برگیڈئیر (ر) اعجاز احمد شاہ، مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ، مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد، معاون خصوصی ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ، ڈی جی آئی ایس آئی، سیکرٹری داخلہ میجر (ر) اعظم سلیمان، سیکرٹری کامرس احمد نواز سکھیرا، چئیرمین ایف بی آر شبر زیدی، چیف سیکرٹری خیبرپختونخواہ، چیف سیکرٹری بلوچستان و دیگر سینئر ملٹری اور سویلین افسران شریک تھے۔

وی این ایس، اسلام آباد