وزیر اعلی خیبر پختونخوا محمود خان نے تھانوں میں آسان انصاف مراکز قائم کرنے کے منصوبے کی منظوری دیدی۔

88

پشاور ,11 مارچ (اے پی پی): خیبر پختونخوا حکومت نے تھانوں کے ماحول کو عوام دوست بنانے کے لئے وزیر اعلی خیبر پختونخوا محمود خان نے تھانوں میں آسان انصاف مراکز قائم کرنے کے منصوبے کی اصولی منظوری دے دی۔

اس منصوبے پر پولیس حکام کی طرف سے وزیر اعلی کو مختلف پہلوؤں پر بریفنگ دی گئی جسکے تحت ابتدائی طور پر رواں مالی سال کے دوران  پشاور کے پانچ تھانوں، حیات آباد،  یونیورسٹی ٹاون ،فقیر آباد،  چمکنی اور بڈھ بیر میں آسان انصاف مراکز قائم کئے جائیں گے جبکہ دوسرے مرحلے میں اگلے مالی سال کے دوران  پشاور کے باقی 15 تھانوں اور پھر صوبے کے دیگر اضلاع کے تھانوں تک  توسیع دی جائے گی۔

آسان انصاف مراکز منصوبے کے تحت تھانوں میں وزٹرز کے لئے فرنٹ ڈیسک، خواتین، خواجہ سراؤں اور بچوں کے لئے الگ خصوصی ڈیسک قائم کئے جائیں گے جن میں خصوصی ڈیسکس پر خواتین عملہ  تعینات ہوگا ۔

وزیر اعلی کو بتایا گیا کہ ان فرنٹ ڈیسکس پر شہریوں کو  شکایات کے آسان اندراج سمیت دیگر سہولیات فراہم ہونگی۔ خواتین سمیت دیگر کمزور طبقوں کے لئے مخصوص ہیلپ لائنز قائم کی جائیں گی۔ آسان انصاف مراکز میں آن لائن ایف آئی آرز کے اندراج کی سہولت میسر ہوگی۔

منصوبے کے تحت تھانوں کی ساری سرگرمیوں کی نگرانی کے لئے تھانوں میں سی سی ٹی وی کیمرے نصب کئے جائیں گے۔ منصوبے کے تحت تھانوں کے مال خانوں کے تمام ریکارڈ کو ڈیجیٹل کیا جائے گا اور تھانوں کے تفتیشی کمروں کی مکمل آڈیو ویڈیو ریکارڈنگ کا انتظام کیا جائے گا۔